کپاس کے کاشتکاروں کوفصل کی آخری چنائی مکمل کرنے کے بعد کھلے ٹینڈوں کو دھوپ میں ..
تازہ ترین : 1

کپاس کے کاشتکاروں کوفصل کی آخری چنائی مکمل کرنے کے بعد کھلے ٹینڈوں کو دھوپ میں پھیلا نے کی ہدایت

لاہور۔16 نومبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء)محکمہ زراعت پنجاب کی طرف سے کپاس کے کاشتکاروں کوسفارش کی گئی ہے کہ وہ فصل کی آخری چنائی مکمل کرنے کے بعد ان کے کھلے ٹینڈوں کو فوری چن کر دھوپ میں پھیلا دیں تاکہ مزید روئی حاصل ہو سکے، ترجمان کے مطابق کاشتکارآخری چنائی کے بعد کپاس کے کھیتوں میں بھیڑ بکریاں چرنے کیلئے چھوڑ دیں تاکہ وہ بچے کھچے ٹینڈے کھا لیں جس سے گلابی سنڈی کے لاروے بھی تلف ہو جائیں گے، بھیڑ بکریوں کو چرانے کے دوران حاصل ہونے والے فضلہ سے زمین میں نامیاتی مادہ کی مقدار میں اضافہ ہوجاتاہے جس سے نئی کاشتہ فصلوں میں کیمیائی کھادوں کا کم مقدار میں استعمال کرنا پڑتا ہے اور کاشتکاروں کے فی ایکڑپیداواری اخراجات میں کمی واقع ہو جاتی ہے، انہوں نے بتایا کہ کاشتکارگھریلو سطح پر کپاس کی چھڑیوں کا بطور ایندھن استعمال کرنے کیلئے ان کو کاٹ کر چھوٹے بنڈل بنائیں اور انہیں عمودی صورت میں کھیت سے باہر ذخیرہ کریں،کپاس کی چھڑیوں کو مناسب وقفوں سے الٹاتے ، پلٹاتے رہیںاورڈھیروں کے نیچے موجود کچرے کو فوری طورپرتلف کریں ، ترجمان نے کہا کہ کپاس کی جننگ فیکٹریوں میںجمع ہونے والے کچرے کو بھی اینٹوں کے بھٹوں میں بطور ایندھن استعمال کریں یا زمین میں گڑھے کھود کر د با دیں،جہاں نئی فصل کاشت نہ کرنی ہووہاں کپاس کے خالی کردہ کھیتوں میں مڈھوں کی تلفی کے لئے فوری ہل یا روٹا ویٹرچلائیں تاکہ زیر زمین چھپے گلابی سنڈی کے لاروے زمین کی سطح پر آکر پرندوں کی خوراک بن جائیںاور سورج کی گر می سے ان کی تلفی آسان ہو جائے۔

وقت اشاعت : 16/11/2016 - 14:15:55

اپنی رائے کا اظہار کریں