یمن میں عرب اتحادی فضائیہ کی بمباری 14 افراد ہلاک ،11 زخمی
تازہ ترین : 1

یمن میں عرب اتحادی فضائیہ کی بمباری 14 افراد ہلاک ،11 زخمی

حملے میں تیل بردار ٹرک کو نشانہ بنایاگیا

صنعائ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)یمن میں عرب اتحادی فضائیہ کی بمباری کے نتیجے میں 14 افراد ہلاک اور 11 زخمی ہوگئے، اتحادی فضائیہ نے وسطی یمن میں ایک تیل بردار ٹرک کو نشانہ بنایا۔ منگل کو برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق عرب اتحادی فضائیہ نے وسطی یمن میں ایک تیل بردار ٹرک کو نشانہ بنایا جس میں جنگجوؤں کیلئے فوجی ساز و سامان موجود تھا جس کے نتیجے میں 14 افراد ہلاک اور دیگر 11 زخمی ہوگئے۔

ہسپتال انتظامیہ کے مطابق 15 زخمیوں کو علاج کیلئے ہسپتال منتقل کیا گیا تھا جس میں بیشتر کی حالت تشویشناک تھی۔دوسری جانب عرب اتحاد کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد العسیری کا کہنا تھا کہ مذکورہ گاڑیوں کا قافلہ حوثی جنگجوؤں اور دیگر عسکریت پسندوں کو اسلحہ اور گولہ باردو کی فراہمی کیلئے صوبہ اِب سے شہرِ تیز کی جانب جارہا تھا۔انھوں نے کہا کہ رات گئے یہ قافلہ ری پبلکن گارڈز کے 55ویں بریگیڈ کے علاقے میں رک گیا جہاں انھیں فضائی کارروائی میں نشانہ بنایا گیا۔

ترجمان نے دعویٰ کیا کہ جس وقت حملہ کیا گیا تھا ان گاڑیوں کے اطراف میں حوثی جنگجو اور اسمگلرز موجود تھے۔واضح رہے کہ عرب اتحاد یمنی صدر منصور ہادی کی حمایت میں 18 ماہ سے یمن میں فضائی کارروائی کررہا ہے اور اس کے حملوں میں اکثر عام شہریوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا جاتا ہے۔اقوام متحدہ کے مطابق یمن میں عرب اتحاد کی فضائی کارروائی شروع ہونے سے اب تک ساڑھے 6 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

یاد رہے کہ عالمی سطح پر یمن کے صدر تسلیم کیے جانے والے منصور ہادی کی حامی ملیشیا اور فورسز نے عدن کو اپنا عارضی بیس بنایا ہوا ہے اور انہیں صنعاء پر قابض حوثی باغیوں اور دیگر شدت پسند تنظیموں کی جانب سے مزاحمت کا سامنا ہے۔سعودی عرب کی سربراہی میں عرب اتحاد نے مارچ 2015 میں ایران کے حمایت یافتہ حوثی باغیوں کے خلاف فضائی کارروائی کا آغاز کیا تھا۔اس عرب اتحاد کو امریکا کی بھی حمایت حاصل ہے اور اس میں 9 عرب ممالک شامل ہیں اور انہوں نے فضائی کارروائیوں کے ذریعے حوثی باغیوں کو جنوبی یمن سے دور ہونے پر مجبور کردیا ہے تاہم باغیوں کا اب بھی دارالحکومت صنعاء پر قبضہ برقرار ہے جو انہوں نے 2014 میں حاصل کیا تھا۔
وقت اشاعت : 15/11/2016 - 22:10:41

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں