خواندگی کی شرح کو بڑھانے کیلئے تعلیمی بجٹ میں 4 فیصد تک اضافہ کی ضرورت ہے
تازہ ترین : 1
خواندگی کی شرح کو بڑھانے کیلئے تعلیمی بجٹ میں 4 فیصد تک اضافہ کی ضرورت ..

خواندگی کی شرح کو بڑھانے کیلئے تعلیمی بجٹ میں 4 فیصد تک اضافہ کی ضرورت ہے

صدر ممنون حسین کی وزیر مملکت بلیغ الرحمٰن سے گفتگو

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ خواندگی کی شرح کو بڑھانے کیلئے تعلیمی بجٹ میں 4 فیصد تک اضافہ کی ضرورت ہے۔ انہوں نے یہ بات منگل کو وزیر مملکت برائے تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت بلیغ الرحمٰن سے ایوان صدر میں ملاقات کے دوران کہی جس میں کوآرڈینیٹروزیراعظم یوتھ پروگرام مخدوم عدیل الرحمن بھی موجود تھے۔

صدر مملکت نے کہا کہ تعلیمی معیار کو بہتر کرنے کیلئے سرکاری اداروں کو پرائیویٹ تعلیمی اداروں کے ساتھ مل کر ایسی پالیسی مرتب کرنی چاہئے جس سے ملک کے تعلیمی نظام میں بہتری آئے۔ صدر مملکت نے کہا کہ مستقبل کے حالات کے پیشِ نظر ہائر ایجوکیشن کمیشن کو ایسا لائحہ عمل مرتب کرنا ہو گا جس سے آنے والے چیلنجوں کا مقابلہ کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں رضاکارانہ طور پر کام کرنے کے رحجان کو پروان چڑھانے کے ضرورت ہے تاکہ سماجی شعبہ میں بہتری آئے۔

صدر مملکت نے قومی تعلیمی نصاب کی تیاری میں ذاتی دلچسپی اور قرآنی تعلیمات کو نصاب کا حصہ بنانے کیلئے مجوزہ قانون سازی پر وزیر مملکت برائے وفاقی تعلیم اور پیشہ وارانہ تربیت کے اقدامات کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے یوتھ پروگرام کے تحت مستحق طلباء کیلئے ادا شدہ فیس کی واپسی موجودہ حکومت کا طرہ امتیاز ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ اس سے نہ صرف مستحق بچوں کی حوصلہ افزائی ہو گی بلکہ اس سے تعلیم کی طرف رحجان میں بھی اضافہ ہو گا۔

صدر مملکت نے کہا کہ تعلیمی پروگرام کی عملداری کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں اوراس کیلئے اپنی بھرپور معاونت کا یقین دلایا۔ صدر مملکت ممنون حسین نے وزیر مملکت کو ہدایت کی کہ قائدِاعظم یونیورسٹی کی چار دیواری کی تکمیل اور غیر قانونی قابضین سے یونیورسٹی کی زمین واگزار کرانے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔ صدر مملکت ممنون حسین کو وزیر مملکت برائے تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت بلیغ الرحمٰن نے تعلیمی میدان میں کئے جانے والے اقدامات کے حوالہ سے آگاہ کیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/11/2016 - 16:59:02

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں