روسی وزیر اقتصادیات رشوت ستانی کے الزام میں گرفتار، الیوکائییف نے توانائی کے ..
تازہ ترین : 1

روسی وزیر اقتصادیات رشوت ستانی کے الزام میں گرفتار، الیوکائییف نے توانائی کے سرکاری ادارے سے ایک معاہدے کے عوض دو ملین ڈالر سے زائد رشوت کے طور پر وصول کیے

ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)روسی وزیر اقتصادیات الیکسی الیوکائییف کو رشوت ستانی کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ، اٴْلیٴْوکائییف نے توانائی کے سرکاری ادارے ’روسنًیفٹ‘ سے ایک معاہدے کے عوض دو ملین ڈالر سے زائد رشوت کے طور پر وصول کیے۔ روسی خبر رساں ادارے کے مطابق روسی وزیر اقتصادیات الیکسی اٴْلیٴْوکائییف کو رشوت ستانی کے الزام میں حراست میں لے لیا گیا۔

ایک نگران کمیشن کے مطابق اٴْلیٴْوکائییف نے توانائی کے سرکاری ادارے ’روسنًیفٹ‘ سے ایک معاہدے کے عوض دو ملین ڈالر سے زائد رشوت کے طور پر وصول کیے تھے۔ مزید یہ کہ اس بارے میں متعلقہ وزیر پر عائد کیے جانے والے الزامات کی تفصیلات جلد ہی عام کر دی جائیں گی۔ نگران کمیشن براہ راست ملکی صدر ولادیمیر پوٹن کے ماتحت ہے۔1991ء کے بعد سے ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ روس میں اتنے بڑے عہدے پر فائز کسی شخصیت کو گرفتار کیا گیا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/11/2016 - 14:18:06

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں