نومنتخب صدر پر کچھ خدشات ہیں ،ٹرمپ انتخابی مہم کے بعد متحد رہنے کے اشارے دیں، ..
تازہ ترین : 1

نومنتخب صدر پر کچھ خدشات ہیں ،ٹرمپ انتخابی مہم کے بعد متحد رہنے کے اشارے دیں، نومنتخب صدر کی ہر تعیناتی پر رائے دینا میرا حق نہیں،امریکی صدر براک اوباما کا پریس کانفرنس سے خطاب

واشنگٹن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)امریکی صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ 'مجھینومنتخب صدر پر کچھ خدشات ہیں وہ انتخابی مہم کے بعد 'متحد رہنے کے اشارے دیں، نومنتخب صدر کی ہر تعیناتی پر رائینہیں دینا میرا حق نہیں امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاؤس میں نیوز کانفرنس کے دوران صدر اوباما نے کہا کہ مجھے 'یقینی طور پر' نو منتخب صدر کے بارے میں خدشات ہیں لیکنمیں نے ہلیری کلنٹن سے کہا کہ وہ نتائج کو 'تسلیم کریں کیونکہ اسی طرح جمہوریت چلتی ہے انہوںنے ڈونلڈ ٹرمپ کے متنازع قدامت پسند رفیق سٹیو بینن کی بطور وائٹ ہاؤس کے چیف سٹریٹیجسٹ تعیناتی پر کوئی بھی رائے نہیں دی۔

ڈونلڈ ٹرمپ سے گذشتہ ہفتے ہونے والی ملاقات کے بارے میں اوباما نے کہا کہ 'میں نے اٴْن سے ملاقات میں زور دیا کہ اس انتخاب کو دیکھیں یہ کتنے گرما گرم ہوئے ہیں اور منقسم ہیں۔ انداز اہمیت رکھتا ہے۔ جیسا کہ میں عوامی سطح پر کہتا ہوں، انتخابی مہم کی نوعیت کی وجہ سے اور اس کی کڑواہٹ اور سفاکی کی وجہ سے، یہ بہت ضروری ہے کہ اتحاد کے کچھ اشارے دیے جائیں اور اقلتیوں کے گروہوں یا خواتین یا دیگر ایسے افراد جنھیں مہم کے دوران نشانہ بنایا گیا ہو، اٴْن تک پہنچا جائے۔

' صدر اوباما نے اوول آفس میں ہونے والی ملاقات کے بارے میں بتایا کہ 'مجھے یقینی طور پر کچھ خدشات ہیں۔ لیکن ہماری گفتگو بہی اچھی رہی۔ملک کے پہلے سیاہ فام صدر نے ڈونلڈ ٹرمپ کے بارے میں کہا تھا کہ 'وہ اس عہدے کے لیے بالکل بھی تیار نہیں ہیں۔' گذشتہ روز ڈونلڈ ٹرمپ نے روس کے صدر ولادی میر پوتن سے ٹیلی فون پر بات کی تھی اور کریملن نے اعلان کیا کہ دونوں ممالک نے اس بات پر اتفاق کیا کہ تعلقات 'بہت زیادہ غیر تسلی بخش ہیں۔

' ڈونلڈ ٹرمپ نے دائیں بازوں کے اخبار برٹ بارٹ نیور کے ایڈیٹر کو اپنا سنیئر مشیر تعینات کیا ہے جس کے بعد کافی تنازع کھڑا ہو گیا ہے۔ صدر اوباما نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ 'میرے لیے یہ صحیح نہیں ہے کہ میں نومنتخب صدر کی ہر تعیناتی پر رائے دوں۔انھوں نے کہا کہ 'ابھی صدر چھ دن ہوئے ہیں اور میرے خیال میں اٴْن کے لیے ضروری ہے کہ انھیں اپنا سٹاف تشکیل دینے کے لیے وقت دیا جائے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 15/11/2016 - 14:16:51

اپنی رائے کا اظہار کریں