خیبرپختونخواہ حکومت کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے ،عمران خان ہیر پھیر کر کے ..
تازہ ترین : 1

خیبرپختونخواہ حکومت کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے ،عمران خان ہیر پھیر کر کے کارکردگی بہتر بتاتے ہیں ‘ رانا بابر حسین

پنجاب میں صحت،زراعت،صاف پانی کی فراہمی اور امن عامہ کیلئے کل بجٹ کا 57 فیصد یعنی 804 ارب روپے مختص کئے گئے

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 اگست ۔2016ء) صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے خزانہ رانا بابرحسین نے عمران خان کے موقف پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ خیبرپختون خواہ حکومت کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے عمران خان ہمیشہ ہیر پھیر کے خیبرپختون خواہ کی کارکردگی بہتر بتاتے ہیں ۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال کے دوران تعلیم‘ صحت‘ زراعت‘ صاف پانی کی فراہمی اور امن و امان کے شعبے پنجاب حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کی حکومت کا نصب العین عوامی فلاح و بہبود‘ معاشی ترقی اور انصاف پر مبنی معاشرے کا قیام ہے۔ عمران خان نے اعداد کو ہیرپھیر کرکے خیبرپختون خواہ حکومت کی کار کردگی بتائے جبکہ ہمارے حکومتی اقدامات ترجیحات اور پالیسیوں کے حصول کی طرف ایک قدم ہیں۔عمران خان نے اپنی پریس کانفرنس میں جنگلات کا رقبہ بڑھانے کا جو اعلان کیا وہ حقائق کے منافی ہے ۔

انہوں نے بتایا کہ اس سال پنجا ب میں جنرل ریونیو وصول کی مد میں1319 ارب روپے کا تخمینہ لگایا گیا ہے اوراین ایف سی ایوارڈ کے تحت وفاقی حکومت سے ٹیکسوں میں مد میں 39 ارب روپے صوبائی حصہ وصول ہونے کا تخمینہ ہے۔صوبائی ریونیو میں 280 ارب روپے کی آمدنی متوقع،ٹیکسوں میں مد میں 184 ارب 40کروڑ روپے ،نان ٹیکس ریونیو کی مد میں 95 ارب 61 کروڑ روپے ہونے کی توقع ہے۔

تعلیم ،صحت،زراعت،صاف پانی کی فراہمی اور امن عامہ کے لئے کل بجٹ کا 57 فیصد یعنی 804 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔تعلیم کے شعبے میں گزشتہ سال کی نسبت47 فیصد اور سکول ایجوکیشن ترقیاتی بجٹ پر 71 فیصد زائد فنڈز مختص کئے ہیں عمران خان کے موقف پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئندہ مالی سال میں صحت کے ترقیاتی بجٹ میں 62 فیصد اضافہ ہو گا۔زراعت ،آبپاشی،لائیو سٹاک،جنگلات،ماہی پروری اور خوراک کے لئے مختص بجٹ میں 47 فیصد اضافہ ہو گا۔

صاف پانی کی فراہمی کے لئے مختص بجٹ 88 فیصد بڑھا دیاگیاہے۔امن عامہ کے لئے 48 فیصد سے زائد رقم مختص کی گئی ہے۔ترقیاتی پروگرام کے لئے بجٹ کا حجم550 ارب روپے ،گزشتہ سال کی نسبت ترقیاتی بجٹ میں 37.5 فیصد اضافہ ہو گا۔نئے مالی بجٹ کے ترقیاتی پروگرام کے نتیجے میں روزگار کے 5 لاکھ نئے مواقع پیداہوں گے۔2016-17 میں جاری اخراجات کا کل تخمینہ849 ارب 94 کروڑ روپے ہے۔

تعلیم ،صحت ،واٹر سپلائی سینی ٹیشن،ویمن ڈویلپمنٹ،سوشل سیکٹرکے شعبوں کے لئے31 فیصد یعنی 168 ارب 87 کروڑ روپے کی ترقیاتی رقم مختص ہے۔صوبائی پارلیمانی سیکرٹری خزانہ نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کا بجٹ غریب عوام کی خدمت اور پنجاب کی ترقی کے مقدس عہد نامے کی حیثیت رکھتا ہے۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف کی قیادت میں اس عہدنامے کو حقیقت کا روپ دینے کے لئے تمام تر توانائیاں وقف کریں گے۔

وقت اشاعت : 12/08/2016 - 19:34:18

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں