پاکستانی طلباء پاک چین سدا بہار دوستی میں پل کا کردار ادا کرسکتے ہیں
تازہ ترین : 1

پاکستانی طلباء پاک چین سدا بہار دوستی میں پل کا کردار ادا کرسکتے ہیں

چین پاکستانی عوام کو محبوب دوست ، قابل اعتماد شراکت دار ، اچھا ہمسایہ اور آہنی برادر سمجھتاہے ہمیں فخر ہے کسی ایک ملک کے مقابلے میں پاکستان کو سب سے زیادہ سکالر شپ دیئے گئے ہیں چینی یونیورسٹیوں نے دو ہزار پاکستانی طلباء کو خصوصی سکالر شپ دیئے ہیں ، چینی سفیر سن وی ڈانگ

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 اگست ۔2016ء) پاکستان میں چین کے سفیر سن وی ڈانگ نے کہا ہے کہ پاکستانی طلباء چین اور پاکستان کے سدا بہار دوستانہ تعلقا ت کے فروغ کیلئے پل کا کردار ادا کرسکتے ہیں ، چینی یونیورسٹیوں نے دو ہزار پاکستانی طلباء کو خصوصی سکالر شپ دیئے گئے ہیں ، توقع ہے زیادہ سے زیادہ پاکستانی نوجوان تعلیم حاصل کرنے کے لئے چین کا رخ کریں گے ،چینی سفارتخا نہ ان کو بہتر سہولتوں کی فراہمی جاری رکھے گا ، بعض اعلیٰ درجہ کی چینی یونیورسٹیوں نے اس سال پاکستانی طلباء کو میرٹ کی بنیاد پر سکالر شپ عطا کرنے پر خصوصی توجہ دی ہے ، چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے باعث چین میں تعلیم حاصل کرنے کے خواہش مند طلبا کی تعداد میں بڑی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے ۔

ان خیالات کا اظہار چینی سفیر نے چینی حکومت کی جانب سے پاکستانی طلباء کو 2016-17ء سیشن کیلئے سکالر شپ عطا کرنے کے سلسلے میں منعقد ہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ چینی حکومت کی طرف سے سکالر شپ پروگرام حکومتوں کی سطح پر ہے اور اس میں اضافہ ہورہا ہے ، اس کامقصد تمام علاقے اور پاکستان کے طلباء کو فائدہ پہنچانا ہے ، طلباء پاکستان کے نہ صرف بڑے شہروں سے آ رہے ہیں بلکہ یہ دور دراز اور پسماندہ علاقوں سے بھی آرہے ہیں ، اس لئے یہ سکالر شپ پاکستان کے ہر علاقے کے طلباء کیلئے ہے ۔

انہوں نے کہا کہ چینی حکومت کی طرف سے اس سال 131سکالر شپ دیئے گئے ہیں جن کا صوبائی رابطے کی وزارت کی سفارش پر انتخاب کیا گیا تھا ، یہ طلباء مختلف چینی یونیورسٹیوں میں مختلف شعبوں میں تعلیم حاصل کررہے ہیں جن میں کمپیوٹر سائنس اور ٹیکنالوجی ، بزنس ایڈمنسٹریشن ، فنانس ، فیزیکل کیمسٹری ، آرکٹیکچر ، سول انجنیئرنگ ، براڈ کاسٹنگ کمیونیکیشن ، بین الاقوامی قانون ، صحافت وغیرہ شامل ہیں جبکہ یہ داخلے بیچلر پروگرام ، ماسٹر پروگرام ، پی ایچ ڈی پروگرام اور ایڈوانس ٹریننگ پروگرام میں ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ پاکستانی طلباء نے چینی زبان سیکھنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے ، اس سے چینی زبان کے اساتذہ کی طلب میں بھی اضافہ ہو گیا ہے ، پاکستان میں چینی سفارتخانہ چینی اساتذہ کی تعداد بڑھانے ، تربیت دینے اور ان کی حوصلہ افزائی کرنے کیلئے کوشش کررہا ہے ، اس مقصد کیلئے نہ صرف مختصر مدتی تربیتی پروگرام شروع کیا جائے گا بلکہ چین میں ڈگری سطح تک ان کی تعلیم کا بھی انتظام کیا جائے گا ،چینی سفیر نے مزید کہا کہ انہیں یقین ہے کہ طلباء جو کچھ چین میں سیکھیں گے وہ ان کے اپنے علاقے اور پاکستان کی مستقبل کی ترقی کیلئے مفید ثابت ہو گا ، چینی حکومت پاکستانی عوام کو اپنا محبوب دوست ، قابل اعتماد شراکت دار ، اچھا ہمسایہ اور برادر آہن کے طورپر بڑا احترام کرتی ہے ، ہم پاکستان کے ساتھ ثقافتی اور تعلیمی تبادلوں کے پروگراموں کو بڑی اہمیت دیتے ہیں ۔

چینی سفیر کا کہنا تھا کہ چینی سکالر شپ کونسل ہر سال دوطرفہ پروگرام کے تحت پاکستانی طلباء کو 220سکالر شپ دے گی ، ان میں سے کچھ نئے طلباء کیلئے ہے جبکہ بقایا چین میں پہلے سے زیر تعلیم طلبا کیلئے ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے یہ فخر کی بات ہے کہ جنوبی ایشیا ء ممالک میں سے کسی ایک ملک کے مقابلے میں پاکستان کو سب سے زیادہ سکالر شپ دیئے جارہے ہیں ، چین کی وزارت تعلیم نے چینی یونیورسٹیوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ چین میں تعلیم حاصل کرنے والے طلباء کی امداد کیلئے خصوصی فنڈ قائم کرے۔

چینی سفیر نے مزید کہا کہ چین اور پاکستان کے تعلقات عظیم ترقی کے نئے دو ر میں داخل ہو چکے ہیں ، گذشتہ سال اپریل میں چینی صدر شی جن پنگ کے دورہ پاکستان کے دوران چین اور پاکستان سیاسی باہمی اعتماد کے فروغ ، معیشت اور تجارت میں تعاون کی توسیع اور ثقافتی اور تعلیمی تبادلہ کے پروگرام کو بھرپور انداز میں آگے بڑھا رہے ہیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/08/2016 - 16:20:41

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں