مقبوضہ کشمیر میں 32 ویں روز بھی کشیدگی بدستور برقرار ،وادی میں کاروبار ،تعلیمی ..
تازہ ترین : 1

مقبوضہ کشمیر میں 32 ویں روز بھی کشیدگی بدستور برقرار ،وادی میں کاروبار ،تعلیمی ادارے اور ٹرانسپورٹ بند

سرینگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اگست ۔2016ء)مقبوضہ کشمیر میں 32 ویں روز بھی کشیدگی بدستور برقرار رہی ، ایک ماہ سے جاری بھارتی فوج کی جارحیت میں 70 سے زائد کشمیری شہید ،6 ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں،اب تک 1300 کشمیریوں کو گرفتار بھی کیا جا چکا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کئی علاقوں میں کرفیو نافذ ہے ،اننت ناگ ،شوپیاں ،کلگام اور پلواما میں پابندیاں لگی ہوئی ہیں، سری نگر ،بارہ مولا،سوپور، ہند واڑہ اور کپواڑہ میں بھارتی فورسز کی سیکیورٹی میں اضافہ کردیا گیا ہے۔

کاروباری مراکز ،تعلیمی ادارے اور ٹرانسپورٹ بھی بند ہے۔گزشتہ روز سمبل میں بھارتی فوج کی کار کی ٹکر سے ایک کشمیری ہلاک ہو گیاجس کے بعد مقامی افراد نے بھارت فوج کے خلاف مظاہرہ کیا۔ حریت رہنماوں کی اپیل پر ہڑتال کی 12 اگست تک جاری ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں کشید ہ صورتحال پر مودی سرکار کے اتحادی اور اپوزیشن بھی مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کر نے پر زور دے رہے ہیں، کانگریس رہنما غلام نبی آزاد حکومت اور وزیر اعظم اس وقت خاموش تماشائی نظر آ رہے ہیں، اپوزیشن نے سوال اٹھایا کہ تمام ملک جاننا چاہتا ہے کہ حکومت اس معاملے پر کیا کر رہی ہے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 09/08/2016 - 13:31:54

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں