دریاوٴں میں سیلاب،انتظامیہ کا ہائی الرٹ جاری،لوگوں کی نقل مکانی جاری
تازہ ترین : 1

دریاوٴں میں سیلاب،انتظامیہ کا ہائی الرٹ جاری،لوگوں کی نقل مکانی جاری

ملتان /ڈیرہ غازی خان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اگست ۔2016ء )دریائے چناب میں ملتان کے مقام پر آئندہ تین روز میں بڑا سیلابی ریلہ گزریگا،انتظامیہ نے ہائی الرٹ جاری کردیا۔ دادو کی گاج ندی میں پانی بتدریج کم ہو رہا ہے جبکہ خضدار میں درنیلی نال کے قریب ٹوٹنے والے بند کی مرمت کا کام جاری ہے۔ ادھر ڈیرہ غازی خان کے کوہ سلیمان کی ندی نالوں میں طغیانی سے کئی علاقوں کا زمینی رابطہ منقطع ہوگیا ،دریائے چناب میں ملتان کے مقام پر 12 اور 13 کی درمیانی شب 3 لاکھ کیوسک کا سیلابی ریلہ گزرے گا۔

ضلعی انتظامیہ نے دریا کے قریبی علاقوں میں رہائش پذیر افراد کو نقل مکانی کے احکامات جاری کر دئیے۔ دوسری جانب ملتان کے تمام فلڈ بند کے پشتے مضبوط کر دئیے گئے ۔ چنیوٹ فلڈ کنٹرول روم کے مطابق ہیڈقادرآباد سے چلنے والا چار لاکھ پچاس ہزار کیوسک کا سیلابی ریلا گزر رہا ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے لوگوں نے نشیبی علاقے خالی کردیئے ہیں۔ابتدائی پانی کے باعث چنیوٹ کے درجنوں نشیبی علاقے زیر آب آگئے ہیں۔

ضلع ہرنائی اور ملحقہ علاقوں میں ہونیوالی بارش کے بعد مختلف ندی نالوں میں سیلابی صورتحال ہے۔ خضدار میں درنیلی نال کے قریب بند ٹوٹنے سے متاثرہ آبادی کو خیمے فراہم کردیئے گئے ۔گزشتہ روزخضدار میں درنیلی نال کے قریب بند ٹوٹنے سے کلی حاجی محمد ایوب میں 30 سے زائد گھر زیر آب آگئے تھے۔ تاہم ضلعی انتظامیہ نے کارروائی کرتے ہوئے لوگوں کو بحفاظت نکال لیاجبکہ بند کی مرمت کاکام جاری ہے ،کیرتھرپہاڑی سلسلوں میں بارش رکنے کے بعد دادو کی گاج ندی میں سیلابی صورتحال کنٹرول میں آگئی۔

متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ پٹ سلیمان کے مقام پر پڑنے والے شگاف کو پر کرلیاگیا۔بند ہونیوالے راستوں کو بھی آمد و رفت کیلئے کھول دیا گیا ہے۔ ڈیرہ غازی خان کے کوہ سلیمان اور قبائلی علاقوں میں بارش کے بعد ندی نالوں میں طغیانی آگئی جس کے باعث کئی علاقوں کا زمینی رابطہ منقطع ہوگیا۔
وقت اشاعت : 09/08/2016 - 13:30:04

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں