عراق میں داعش نے جاسوسی کے الزام میں6 افراد کوموت کے گھاٹ اتار دیا
تازہ ترین : 1

عراق میں داعش نے جاسوسی کے الزام میں6 افراد کوموت کے گھاٹ اتار دیا

داعش جنگجوؤں نے 4افراد کو سروں میں پستول سے گولیاں ماریں، ایک کو کلاشنکوف کی گولی ایک شخص کی گردن میں بم باندھ کر اسے اڑا دیا ، ایک دوسرے شخص کا سر خنجر کے ذریعے سے تن سے جدا کردیا گیا

بغداد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 مارچ۔2016ء )شدت پسند گروپ دولت اسلامی داعش نے عراق کے شہر فلوجہ میں6 افراد کو عراقی حکومت کے لیے جاسوسی کے الزام میں تین مختلف طریقوں سے موت کے گھاٹ اتار دیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق داعش کی جانب سے جاسوسی کے الزام میں یہ ہلاکتیں دارالحکومت بغداد کے مغرب میں واقع الانبار گورنری کے شہر فلوجہ میں کی گئیں۔

6 افراد کو3 مختلف طریقوں سے ہلاک کیے جانے کی تصاویر اور فوٹیجز سوشل میڈیا پر بھی پوسٹ کی گئی ہیں۔ زیرحراست چھ افراد کو نارنگی رنگ کا لباس پہنائے دکھایا گیا ہے۔ جنہیں بعد ازاں قتل کردیا جاتا ہے۔داعش کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فلوجہ کی ایک اسلامی عدالت نے ملزمان کو جاسوسی اور عراق حکومت کو داعش کی مخبری کے ساتھ ساتھ مرتد ہونے کی سزائیں سنائی تھیں اور انہیں موت کے گھاٹ اتارنے کا حکم دیا تھا۔ان میں سے 4افراد کو سروں میں پستول سے گولیاں مار کر، ایک کو کلاشنکوف کی گولی جب کہ ایک شخص کی گردن میں بم باندھ کر اسے اڑا دیا گیا۔ ایک شخص کا سر خنجر کے ذریعے سے تن سے جدا کردیا گیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 18/03/2016 - 18:33:55

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں