وطن کی خاطر قربانیاں دینے والے آئی ڈی پیز کی باعزت طور پر گھروں میں بحالی حکومت ..
تازہ ترین : 1

وطن کی خاطر قربانیاں دینے والے آئی ڈی پیز کی باعزت طور پر گھروں میں بحالی حکومت کی اولین ترجیح ہے ‘ اسحا ق ڈار

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 مارچ۔2016ء)وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار نے وطن کی خاطر قربانیاں دینے والے آئی ڈی پیز کی باعزت طور پر گھروں میں بحالی حکومت کی اولین ترجیح قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ 46 ارب ڈالر میں سے 35 ارب ڈالر کے توانائی کے منصوبے ہیں ‘باقی گیارہ ارب ڈالر کے منصوبے حکومت پاکستان مکمل کرائیگی۔جمعہ کو قومی اسمبلی میں تحریک انصاف کے رہنما غلام سرور خان نے کہا کہ ایچ ایم سی کے محنت کشوں کو گزشتہ پانچ ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ‘ فیکٹری ایک قومی اثاثہ ہے اس کی بحالی کے لئے بیس ارب روپے کے پلان کو یقینی بنایا جائے۔

انہوں نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ ایک بڑی کامیابی ہے تاہم اس بات کا تعین نہیں ہو سکا کہ لیبر کہاں سے آئیگی اس حوالے سے متعلقہ کمیٹیوں کے ساتھ بات کی جائے۔ اس پر اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ حکومت کی پالیسی ہے کہ جتنے بھی ہمارے آئی ڈی پیز ہیں ان کیلئے ہمارا جامع پروگرام ہے ‘ پاکستان کے اندر آئی ڈی پیز کیلئے بیس ارب کی گندم فراہم کی ‘16 سے 17 ارب نقد رقم خرچ کی گئی ہے۔

جو لوگ افغانستان چلے گئے ہیں ان کی تفصیلات دی جائیں وہ وزیر داخلہ کے علم میں لائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی ڈی پیز کی فلاح و بہبود کے لئے وزارت خزانہ میں پورا سیل کام کر رہا ہے۔ ریاستی و سرحدی امور اور دیگر متعلقہ وزارتیں بھی کام کر رہی ہیں۔ حکومت کی اولین ترجیح ہے کہ وطن کی خاطر قربانی دینے والے ٹی ڈی پیز کو باعزت طریقہ سے گھروں میں آباد کیا جائے گا۔

وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ ایچ ایم سی‘ وزارت صنعت کے دائرہ کار میں آتا ہے۔ پاکستان سٹیل ہو یا اس طرح کے دوسرے اداروں کے معاملات ای سی سی میں آتی ہیں۔ ہم اس کو چیک کریں گے کہ وزارت صنعت نے اس کی سمری کہا بھجوائی ہے۔ میری کوشش ہوتی ہے کہ ایکنک یا ای سی سی میں کوئی بھی ایجنڈا ایک ہفتہ سے زیادہ التواء کا شکار نہ ہو۔ ایچ ای سی کے حوالے سے ہائی کورٹ نے پرائیویٹائزیشن کمیشن کے حق میں فیصلہ کیا ہے۔

ہم ایچ ایم سی کے ملازمین کی تنخواہوں کے حوالے سے وزارت صنعت کی سمری کے بارے میں معلومات حاصل کریں گے۔ ملازمین کو تنخواہیں ملنی چاہئیں۔ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ کے وزیر انچارج احسن اقبال ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 46 ارب ڈالر میں سے 35 ارب ڈالر کے توانائی کے منصوبے ہیں۔ باقی گیارہ ارب ڈالر کے منصوبے حکومت پاکستان مکمل کرائے گی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 18/03/2016 - 16:55:42

اپنی رائے کا اظہار کریں