یہودی میراتھن ریس کے مخالفت، تین سماجی کارکن بیت المقدس سے بے دخل کردیئے گئے
تازہ ترین : 1

یہودی میراتھن ریس کے مخالفت، تین سماجی کارکن بیت المقدس سے بے دخل کردیئے گئے

مقبوضہ بیت المقدس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 مارچ۔2016ء) اسرائیلی حکام نے فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے تین سماجی کارکنوں کو القدس میں میراتھن ریلی نکالنے کی مخالفت کی پاداش میں شہر سے بے دخل کردیا ۔فلسطینی خبر ادارے کے مطابق اسرائیل کیساتھ تعلقات کے قیام کی مخالفت میں سرگرم کمیٹی کے سیکرٹری جنرل اور دو دوسرے سماجی کارکنوں کو تین دن کیلئے بیت المقدس میں داخل ہونے سے منع کردیا گیا ہے۔

ان پرالزام عائد کیا گیا ہے کہ وہ بیت المقدس میں ہونیوالی میراتھن دوڑ کو ناکام بنانے کیلئے اس کی مخالفت میں مہم چلا رہے تھے۔رپورٹ کے مطابق اسرائیل سے تعلقات کے قیام کی مخالف تنظیم کے سربراہ جہاد عویضہ کو اسرائیلی انٹیلی جنس اداروں نے اپنی دفتر طلب کرکے اسے تین دن کیلئے شہر سے نکل جانے کا نوٹس تھما دیا۔ اس نوٹس میں لکھا ہے کہ جہاد عویضہ کی میراتھن دوڑ کے دوران بیت المقدس میں موجود یہودی آباد کاروں کی سلامتی کیلئے خطرے کا باعث بن سکتی ہے۔ اس لئے اسے تین دن کیلئے بیت المقدس سے بے دخل کیا جاتا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 18/03/2016 - 16:18:36

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں