بچوں کے سکول میں داخلوں کی حکومتی توجہ کے باوجود 21%بچے سکول نہیں جاتے،اے ایس ای ..
تازہ ترین : 1

بچوں کے سکول میں داخلوں کی حکومتی توجہ کے باوجود 21%بچے سکول نہیں جاتے،اے ایس ای آر کی رپورٹ

ملتان( اُردو پوائنٹ تازہ ترین ۔ 17 مارچ۔2015ء)ضلع ملتان میں تعلیم کی صورتحال پر اے ایس ای آر (اینوال اسٹیٹس آف ایجوکیشن رپورٹ ) نے اپنی رپورٹ مرتب کی ہے کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی سکولوں میں زیادہ سے زیادہ بچوں کو داخل کروانے کی حالیہ توجہ کے باوجود ملتان میں ابھی تک 6-16سال کے 21%بچے سکول نہیں جاتے۔آئین کے آرٹیکل 25Aکے تحت تعلیم کا حق ہر کسی کو حاصل ہے۔

یہ نتائج پاکستان کے سب سے بڑے سالانہ گھرانوں کے اے ایس ای آر سروے کی 2015رپورٹ کے بعد سامنے آئے۔6thاے ایس ای آر سروے کی رپورٹ 15مارچ کو پیش کی گئی ۔یہ سروے ضلع ملتان میں آکسفام گریٹ بریٹن کے تعاون سے ادارہ تعلیم واگاہی نے ترتیب دیا۔سروے ٹیم میں رضاکارانہ طور پرشہریوں نے ضلع ملتان کے 45دیہاتوں کے 900گھرانوں کا دورہ کیا۔جس کے مطابق یہ نتائج سامنے آئے کہ ضلع ملتان میں 6-16سال کے 79%بچے سکول جاتے ہیں،جن میں سے 62%سرکاری سکولوں میں اور 38%نجی سکولز میں داخل ہیں۔

پنجاب ایجوکیشن فاونڈیشن کے ایڈیشنل ریجنل ڈائریکٹر مظہرعباس خان،ادارہ تعلیم واگاہی کے صوبائی کوارڈینٹر قاضی احسان اور ترقی و منصوبہ بندی کے انچارج سیدحسن رضا گیلانی ،رانا تسلیم ،چوہدری غلام سرور،یاسمین خاکوانی،شوکت حسین،رانا غفار طالب نے اے ایس ای آر کی رپورٹ کے نتائج کودیکھتے ہوئے ان کے کام کو سراہا۔اور کہا کہ آئین کے آرٹیکل 25Aکے تحت پاکستان میں تعلیم حاصل کرنا ہرکسی کا بنیادی حق ہے ۔ بلاشبہ اے ایس ای آر(اینوال اسٹیٹس آف ایجوکیشن رپورٹ) عام عوام کو قومی بیانیے اور پالیسی پر مباحثہ سے اگاہ کرکے اہم کرداراداکررہی ہے۔

وقت اشاعت : 17/03/2016 - 19:23:51

اپنی رائے کا اظہار کریں