بھارتی لوک سبھا کے رکن اسد الدین اویسی بی جے پی حکومت کی ناقص گورننس پر برس پڑے ..
تازہ ترین : 1

بھارتی لوک سبھا کے رکن اسد الدین اویسی بی جے پی حکومت کی ناقص گورننس پر برس پڑے ‘بھارتی فوج کی کار کر دگی کا پول کھول دیا

پٹھان کوٹ حملے کے بعد ہماری این ایس جی عمارت میں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پر 12 گھنٹے تک فائرنگ کرتی رہی ‘اسد الدین

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء) بھارتی لوک سبھا کے مسلمان رکن اسد الدین اویسی بی جے پی حکومت کی ناقص گورننس پر کھل کر برس پڑے اور فوج کی کارکردگی کا پول کھول دیا۔لوک سبھا میں اظہار خیال کرتے ہوئے اسد الدین اویسی نے کہا کہ پٹھان کوٹ حملے کے بعد ہماری این ایس جی ایک عمارت میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر 12 گھنٹے تک فائرنگ کرتی رہی اور پھر بعد میں معلوم ہوا کہ وہ عمارت تو خالی تھی۔

انہوں نے کہاکہ پٹھان کوٹ واقعہ پر تحقیقات کے لئے پاکستان کی ایک ٹیم بھارت آ رہی ہے، وزیر دفاع کہتے ہیں کہ اس ٹیم کو ایئربیس کے اندر جانے کی اجازت نہیں دی جائے گی جب کہ وزیر داخلہ کہتے ہیں کہ پاکستانی ٹیم کو تحقیقات کے لئے اندر جانے کی اجازت دی جائے گی۔ آپ لوگ پہلے آپس میں یہ طے کر لیں کہ اندر جائیں گے یا باہر جائیں گے، دوبارہ اگر پٹھان کوٹ کی طرز کا حملہ ہوا تو کون سا ریمبو اس کا انچارج ہوگا کیونکہ بی جے پی کی تو حکومت ہی ’ریمبو‘ کی حکومت ہے اور یہاں ہر کوئی ریمبو بننے کی کوشش کرتا ہے۔

اسد الدین اویسی نے کہاکہ بی جے پی نے اپنی غلط پالیسیوں کی وجہ سے کشمیری عوام کے دل جیتنے کا تاریخی موقع کھو دیا ہے ‘ آج اگر کوئی کشمیر میں مارا جاتا ہے تو 40 سے 50 ہزار افراد اس کے جنازے میں شریک ہوتے ہیں ہیں، بی جے پی کی حکومت مقبوضہ کشمیر میں کیا گورننس کر رہی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/03/2016 - 16:53:36

اپنی رائے کا اظہار کریں