پی آئی اے کی نجکاری کے معاملے پر اپوزیشن اور حکومت کا پیر کی شام 5 بجے مشترکہ اجلاس ..
تازہ ترین : 1

پی آئی اے کی نجکاری کے معاملے پر اپوزیشن اور حکومت کا پیر کی شام 5 بجے مشترکہ اجلاس بلانے کا فیصلہ

پی آئی اے بل اجلاس کے پہلے روز منظور نہ کرائے جانے پر اتفاق

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء)پی آئی اے کی نجکاری کے معاملے پر اپوزیشن اور حکومت نے پیر کی شام 5 بجے مشترکہ اجلاس بلانے کا فیصلہ کرتے ہوئے پی آئی اے بل اجلاس کے پہلے روز منظور نہ کرائے جانے پر اتفاق کیا ہے ۔ جمعرات کو حکومت اور اپوزیشن ارکان کے درمیان مذاکرات ہوئے مذاکرات میں اپوزیشن کی جانب سے خورشید شاہ، محمود خان اچکزئی، اقبال محمد علی، شاہ محمود قریشی، صاحبزادہ طارق اللہ، آفتاب شیر پاوٴ جبکہ حکومتی ارکان میں اسحاق ڈار، زاہد حامد اور ایاز صادق شامل تھے۔

پی آئی اے کی نجکاری پر حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کے درمیان باضابطہ مذاکرات میں اس بات پر اتفاق ہوا ہے کہ پی آئی اے کو لمیٹڈ کمپنی بنانے کا فیصلہ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں ہو گا جو تین سے چار روز تک جاری رہے گا۔ فریقین کے درمیان یہ اتفاق ہوا کہ اجلاس کے پہلے روز پی آئی اے کی نجکاری پر حکومت کی جانب سے بریفنگ دی جائے گی۔ اپوزیشن ارکان نے کہا کہ پی آئی اے کی نجکاری کا حکومتی طریقہ کار ٹھیک نہیں ہے۔

پیر کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے صرف گیس چوری کی روک تھام کا بل منظور کرایا جائے گا۔ رہنما تحریک انصاف شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پی آئی اے بل کے پیچھے دل ہے۔ بل کا پتہ ہے بتایا جائے دل میں کیا ہے۔ مشترکہ اجلاس کے حوالے سے چیئرمین سینیٹ کی رولنگ کی کاپی حوالے کی جائے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 17/03/2016 - 16:18:59

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں