آئی جی اسلام آباد ترقی کیس،اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاق کو رپورٹ پیش کرنے کیلئے ..
تازہ ترین : 1

آئی جی اسلام آباد ترقی کیس،اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاق کو رپورٹ پیش کرنے کیلئے دوبارہ مہلت دیدی،سماعت22 مارچ تک ملتوی

عدالت کسی کے ساتھ زیادتی نہیں ہونے دے گی ،جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے دوران سماعت ریمارکس

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء) اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق آئی جی اسلام آباد آفتاب احمد چیمہ کو ترقی نہ دینے کے خلاف دائر کیس میں وفاق کو انکوائری رپورٹ پیش کرنے کے لئے دوبارہ مہلت دیتے ہوئے سماعت 22 مارچ تک ملتوی کر دی ۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیئے کہ عدالت انصاف کے تمام تقاضے پورا کرے گی ۔ کسی کے ساتھ زیادتی نہیں ہونے دے گی ۔

گزشتہ روز جسٹس عزیز صدیقی پر مشتمل سنگل بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔ درخواست گزار کی جانب سے ایڈووکیٹ مصطفیٰ رمدے جبکہ وفاق کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل عدالت میں پیش ہوئے ۔ ایڈووکیٹ مصطفیٰ رمدے نے عدالت کو بتایا کہ آفتاب چیمہ کو ان کے خلاف انکوائری میں کلیئر کر دیا گیا ہے ۔ ترقی نہ دینے کا اب کوئی جواز باقی نہیں رہتا ۔ اس پر جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ فکر نہ کریں عدالت انصاف کے تمام تقاضے پورا کرے گی ۔

کسی کے ساتھ زیادتی نہیں ہونے دے گی ۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے مزید کہا کہ ترقی روکنے کی صرف ایک وجہ تھی جو انکوائری مکمل ہونے پر ختم ہو گئی ۔ اس دوران ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ اس طرح تو ایک نیا پنڈوہ بکس کھل جائے گا ۔ جس پر جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ عدالت آئین و قانون کے اندر رہتے ہوئے فیصلہ دیتی ہے ۔ بہتر ہے کہ آپ سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ سے بات کر لیں ۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے انکوائری رپورٹ پیش کرنے کے لئے دوبارہ مہلت طلب کی عدالت نے ان کی استدعا منظور کرتے ہوئے سماعت 22 مارچ تک ملتوی کر دی ۔

وقت اشاعت : 17/03/2016 - 14:41:20

اپنی رائے کا اظہار کریں