سنی اتحاد کونسل نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے دس نکاتی فارمولا پیش کردیا
تازہ ترین : 1

سنی اتحاد کونسل نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے دس نکاتی فارمولا پیش کردیا

داعش ‘ القاعدہ اورپاکستانی طالبان جیسی تنظیموں کیخلاف تمام مکاتب فکر کی طرف سے اجتماعی فتویٰ جاری کروایا جائے ‘ تجاویز

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ءپی) سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے دس نکاتی فارمولا پیش کردیا۔ انہوں نے اپنے فارمولے میں دی گئی تجاویز میں کہا ہے کہ داعش ، القاعدہ اورپاکستانی طالبان جیسی تنظیموں کے خلاف تمام مکاتب فکر کی طرف سے اجتماعی فتویٰ جاری کروایا جائے۔ نیشنل ایکشن پلان پر عملدر آمد کی نگرانی کیلئے پارلیمانی کمیٹی بنائی جائے۔

نیکٹا کو مطلوبہ فنڈ فراہم کرکے فعال کیا جائے۔ پاک افغان سرحد پر لیزر بردار دیوار تعمیر کی جائے اور چمن وطو رخم باڈر پر ویزہ اور پاسپورٹ کے بغیر آمدروفت روکی جائے۔ افغان مہاجرین کو واپس بھیجنے کیلئے عملی اقدامات تیز کئے جائیں۔ دہشتگردی کے معاملہ پر بھارت اور افغانستان کی حکومتوں سے دو ٹو ک بات کی جائے اور عالمی دبا? کے ذریعے بھارت اور افغانستان کو دہشتگردی کی پشت پناہی سے روکا جائے۔

نیشنل ایکشن پلان پر عمل در آمد میں سستی اور غفلت کرنے والے سرکاری اداروں اور شخصیات کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔ نیشنل ایکشن پلان کی مخالفت کو جرم قرار دیا جائے۔ دہشتگردی اور انتہا پسندی ، فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے فکری و نظریاتی تحریک چلائی جائے اور علماء کے ذریعے جہاد کا صحیح اسلامی تصور قوم کے سامنے پیش کیا جائے۔ دہشتگردوں کے فکری ردّ کیلئے مسلسل خطبات جمعہ دیئے جائیں اور میڈیا پر عوامی آگاہی کیلئے خصوصی مہم چلائی جائے۔ اسلام کے نام پر قتل و غارت کرنے والوں کے گمراہ کن نظریات کے ردّ کیلئے اسلامی نظریاتی کونسل کو ہدف دیاجائے۔

وقت اشاعت : 16/03/2016 - 21:09:22

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں