لوک ورثہ کے ملازمین کوپنشن کی مد میں 200روپے فراہم کئے جاتے رہے ہیں ، ادارے کی طر ..
تازہ ترین : 1

لوک ورثہ کے ملازمین کوپنشن کی مد میں 200روپے فراہم کئے جاتے رہے ہیں ، ادارے کی طر ف سے پنشن بند کرنے پر ایک خاتون دل کا دورہ پڑ نے سے انتقال کر گئیں،سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات میں انکشاف ، چیئرمین کمیٹی و اراکین کمیٹی کا اظہار برہمی ،زارت اطلاعات کو معاملے کا فوری نوٹس لیکر ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کی ہدایت

موسمی تغیرات کی وجہ سے سالانہ14ارب ڈالر کا نقصان ہو رہا ہے ، 2050تک سارا کراچی سمندر کا حصہ بن جائیگا ا ،اس سے 4کروڑ لوگ متاثر ہونگے ، سینیٹر مشاہد اﷲ

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ءپی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات میں انکشاف ہوا ہے کہ لوک ورثہ کے ملازمین کوپنشن کی مد میں 200روپے فراہم کئے جاتے رہے ہیں جبکہ ادارے کی طر ف سے پنشن بند کرنے پر ایک خاتون دل کا دورہ پڑ نے سے انتقال کر گئیں ،جس پر چیئرمین کمیٹی و اراکین کمیٹی نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے وزارت اطلاعات و نشریات کو معاملے کا فوری نوٹس لیکر ذمہ داروں کے خلاف کاروائی کرنے کی ہدایت کر دی۔

کمیٹی میں سابق وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی سینیٹر مشاہد اﷲ خان نے کہا کہ موسمی تغیرات کی وجہ سے سالانہ14ارب ڈالر کا نقصان ہو رہا ہے ، 2050تک کراچی سمندر کا حصہ بن چکاہو گا ا ورجس سے 4کروڑ عوام متاثر ہو گی،مگر اس جانب توجہ نہیں دی جارہی،پی ٹی وی انتظامیہ موسم کے حوالے سے الگ چینل شروع کرے جس میں لوگوں کو موسمیاتی تبدیلیوں اور اس حوالے سے احتیاطی تدابیر سے آگاہ کیا جائے۔

کمیٹی میں سیکر ٹری وزارت اطلاعات و نشریات عمران گردیزی نے کہا کہ رائٹ ٹو انفارمیشن بل کو تمام فریقوں کی مشاورت سے حتمی شکل دیدی ہے،کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں بل پیش کر دیا جائے گا۔کمیٹی نے وزارت اطلاعات و نشریات کے گزشتہ مالی سال کے بجٹ کا43.68فیصد خرچ ہونے پر آئندہ اجلاس میں ہیڈ وا ئیز اخراجات کی تفصیلات طلب کر لیں۔کمیٹی کا اجلاس چیئر مین سینیٹر کامل علی آغا کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا۔

اجلاس میں سینیٹرز ڈاکٹر اشوک کمار،مشاہد اﷲ خان اورر وبینہ خالد کے علاوہ سیکرٹری اطلاعات و نشریات عمران گردیزی ،چیئرمین پی ٹی وی ، چیئرمین پیمراابصار عالم کے علاوہ دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔پی ٹی وی کے مورال میں بہتری کے حوالے سے چیئرمین پی ٹی وی عطاء الحق قاسمی نے کہا کہ پی ٹی وی میرا جنون ہے 35سال سے اس ادارے کے لئے خدمات سر انجام دے رہا ہوں ، ادارے کی مالی حالت بھی خاصی خراب ہے اسکو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کیلئے پارلیمنٹ کی خصوصی مدد چاہیئے۔

وزیر اعظم پاکستان نے بہتری کیلئے 50کروڑ روپے دیئے بھی ہیں اور ہرسال دینے کا وعدہ بھی کیا ہے۔جس پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ پی ٹی وی حکومتی ادارے کی بجائے ریاستی ادارہ بن جائے تو بہتری دیکھنے میں آئیگی جس پر چیئرمین پی ٹی وی نے یقین دلایا کہ اگلے تین ماہ تک بہتری نظر آنا شروع ہو جائیگی۔ چیئرمین کمیٹی نے آئندہ اجلا س میں وزارت داخلہ اور قانون کے حکام سے نجی ٹی وی کے لائسنس کی منسوخی کے حوالے سے رائے مانگ لی۔

قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں معلومات تک رسائی کے بل کے حوالے سے چیئرمین کمیٹی کامل علی آغا نے کہا کہ متعلقہ وزیر نے قائمہ کمیٹی کو یقین دلایا تھا کہ وزیر اعظم پاکستان نے قائمہ کمیٹی کے منظور کردہ بل کو کیبنٹ کی میٹنگ کے ایجنڈے میں شامل کر لیا۔اب نئی کمیٹی بنانے کی کیا ضروت تھی ہم نے جو بل دیا تھا وہ اور تھا ہمیں یہ بھی بتایاگیا تھا کہ بل کے کچھ الفاظ اراکین کمیٹی کی مشاورت سے آگے پیچھے کر ینگے۔

اسکو پرائیوٹ ممبرکے بل کے طور پر بھی شامل کیا جا سکتا ہے۔جس پر سیکرٹری اطلاعات و نشریات نے یقین دلایا کہ آئندہ اجلا س میں یہ بل قائمہ کمیٹی کو پیش کر دیا جائیگا۔قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں کوڈ آٖ ف کنڈیکٹ کے حوالے سے بھی معاملات کا تٖفصیل سے جائزہ لیا گیا ور قائمہ کمیٹی نے یہ فیصلہ کیا کہ سینیٹر فرحت اﷲ بابر ،سینیٹر مشاہد اﷲ خان اور سینیٹر روبینہ خالد،پیمرا آفس کا دورہ کر کے پیمرا حکام کے ساتھ ملکر بل کا جائزہ لر کر 15دن کے اندر رپورٹ قائمہ کمیٹی کو پیش کریگی ۔

اراکین کمیٹی نے پاکستان ہائی کمیشنز میں پریس آفیسرز کی تعیناتی کے کوٹے پر بھی تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیڈرز کا 75فیصد کوٹہ مقرر کرنا نا انصافی ہے25فیصد پروائیوٹ سیکٹر سے لینے کا مطلب ہے کہ سیاسی تقرریاں عمل میں لائی جائینگی۔ سیکرٹری اطلاعات و نشریات نے کہا کہ کیٖڈرز کی مزید چھ پوسٹیں بڑھا دی ہیں75فیصد کوٹہ کرنے سے ان کی تعداد کم نہیں ہو گی۔چیئرمین کمیٹی نے دس دن کے اندرمعاملات کا جائزہ لینے کی ہدایت کردی۔

وقت اشاعت : 16/03/2016 - 21:04:55

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں