لاہور ہائیکورٹ میں بیوی سے بچوں کی بازیابی کے لئے آنے والے شوہر کی عدالت نے بیوی ..
تازہ ترین : 1

لاہور ہائیکورٹ میں بیوی سے بچوں کی بازیابی کے لئے آنے والے شوہر کی عدالت نے بیوی سے صلح کرا دی،،،کمرہ عدالت کے باہر میاں بیوی کے درمیان

عہدو پیمان دیکھ کر بچوں کے نانا نانی منظر برداشت نہ کر سکے اور ایک بچہ چھین کر فرار ہو گئے۔

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 مارچ۔2016ء) لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس سردار احمد نعیم کے روبرو خاتون رخسانہ پروین کے خاوند نے عدالت کو بتایا کہ اسکی بیوی لڑائی جھگڑے کے بعد دونوں بچوں کو لے کے میکے چلی گئی ہے لہذا عدالت بچوں کو بازیاب کرا کے اس کے حوالے کرئے۔تھانہ جھنگ بازار فیصل ا?باد پولیس نے دونوں بچوں کو عدالت میں پیش کیا تو عدالت نے میاں بیوی کو مصالحت کا ایک موقع فراہم کیا تو دونوں میاں بیوی نے عدالت میں صلح کر لی،،،،کمرہ عدالت سے باہر نکلتے ہی خاتون روتے ہوئے اپنے سسر کے گلے لگ گئی اور اپنی غلطی کی معافی مانگتی دکھائی دی،،،،خاتون اور اس کا شوہر عدالتی فیصلے کے بعد عہدو پیمان میں مصروف تھے کہ بچوں کے نانا نانی یہ مناظر برداشت نہ کر سکے اور سعید حسنین نامی نواسہ چھین کر فرار ہو گئے۔

وقت اشاعت : 15/03/2016 - 11:51:23

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں