عدالت نے بغیر لائنس کلاشنکوف رکھنے کے مقدمے میں مصطفی کانجو کو اشتہاری قرار دیدیا ..
تازہ ترین : 1

عدالت نے بغیر لائنس کلاشنکوف رکھنے کے مقدمے میں مصطفی کانجو کو اشتہاری قرار دیدیا

جائیداد ضبط کرنے کی کاروائی کا آغاز ،ملزم کے نام پر موجود منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات بھی طلب

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء) لاہور کی مقامی عدالت نے بغیر لائسنس کلاشنکوف رکھنے کے مقدمے میں بیرون ملک فرار ہونے اور عدالتی نوٹسز کی عدم تعمیل پرملزم سابق وزیر مملکت کے بیٹے مصطفی کانجو کو اشتہاری قراردیدیا۔ گزشتہ روز لاہور کے جوڈیشل مجسٹریٹ اکرم آزاد نے مصطفی کانجو کے خلاف کیس کی سماعت کی، تعمیل کنندہ نے عدالت کو آگاہ کیا کہ مصطفی کانجو بیرون ملک فرار ہو چکا ہے اور جان بوجھ کر عدالت میں پیش نہیں ہو رہا جبکہ سرکاری وکیل سید محمد زرغام نے عدالت کو بتایا کہ ملزم مصطفی کانجو کے خلاف تھانہ شمالی چھاؤنی میں بغیر لائسنس کلاشنکوف رکھنے کا مقدمہ درج ہے۔

انہوں نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم مصطفی کانجو نے اسی کلاشنکوف سے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں راہگیر طالبعلم زین جاں بحق ہوا تھا۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ زین قتل کیس سے بریت کے بعد سے لے کر آج تک ملزم مصطفی کانجو اس مقدمے میں اپنی بیگناہی ثابت کرنے کے لئے حاضر نہیں ہوا۔جس پر عدالت نے مصطفی کانجو کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے ملزم کی جائیداد ضبط کرنے کی کاروائی کا آغاز کر نے کا حکم دیتے ہوئے ملزم کے نام پر موجود منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات بھی طلب کر لیں۔

وقت اشاعت : 14/03/2016 - 17:09:41

اپنی رائے کا اظہار کریں