اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے ناقابل ضمانت وارنٹ
تازہ ترین : 1

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے ناقابل ضمانت وارنٹ

گرفتاری کے خلاف دائر درخواست کی سماعت تین دن کیلئے ملتوی کر دی

اسلام آباد ۔ 14 مارچ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء) اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کے غازی عبدالرشید قتل کیس میں ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری ہونے کے خلاف دائر درخواست کی سماعت تین دنوں کیلئے ملتوی کر دی۔ پیر کو عدالت عالیہ کے جسٹس عامر فاروق پر مشتمل سنگل بنچ نے سابق صدر پرویز مشرف کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی تو درخواست گزار کی جانب سے ملک طاہر ایڈوکیٹ عدالت میں پیش ہوئے اور موٴقف اختیار کیا کہ غازی عبدالرشید قتل کیس میں ہم نے ماتحت عدالت میں سابق صدر کی طیبعت کے حوالے سے میڈیکل رپورٹ بھی جمع کرائی تھی تاہم ٹرائل کورٹ نے سابق صدر کے ناقابل ضمانت ورانٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔

سماعت کے دوران فاضل جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ہم کیس واپس ٹرائل کورٹ بھیج دیتے ہیں اور وہ سابق صدر کی جانب سے دائر حاضری سے استثنٰی کی درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ وہی عدالت کرے گی۔ جسٹس عامر فاروق نے مزید ریمارکس دیئے کہ اسی طرح کا معاملہ ہم پہلے بھی ٹرائل کورٹ کو بھیج چکے ہیں عدالت عالیہ ماتحت عدالت کی کارروائی میں کس طرح مداخلت کر سکتی ہے۔

غازی عبدالرشید کے بیٹے کے وکیل طارق اسد ایڈوکیٹ نے سماعت کے دوران موٴقف اختیار کیا کہ سابق صدر نے سپریم کورٹ میں بھی اپنی میڈیکل رپورٹ جمع کرائی تھی اس فیصلہ کا بھی سب کو علم ہے ۔سماعت کے دوران سابق صدر پرویز مشرف کے وکیل نے استدعا کی کہ ہم ماتحت عدالت کا فیصلہ اور سابق صدر کی طبیعت کے حوالے سے تازہ میڈیکل رپورٹ جمع کرانا چاہتے ہیں جس پر عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے سماعت تین دنوں کے لئے ملتوی کر دی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 14/03/2016 - 15:23:07

اپنی رائے کا اظہار کریں