فصلوں کیلئے بہتر جڑی بوٹی اورکیڑے مار دوائی کا استعمال ضر وری ہے ،زرعی ماہرین
تازہ ترین : 1

فصلوں کیلئے بہتر جڑی بوٹی اورکیڑے مار دوائی کا استعمال ضر وری ہے ،زرعی ماہرین

سلانوالی۔14 مارچ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء )زرعی ماہرین نے بتایا ہے کہ کھادوں اورجڑ ی بوٹیاں مار ادویہ کوملا کر استعمال کرنے کے فوائد بہت زیاد ہ اورتکنیکی اورمعاشی حوالہ سے کھادوں کی صنعت میں جدت ہے فصلوں کی بہترخوارک کیلئے بہترین قسم کی جڑی بوٹی اورکیڑے مار دوائی کا استعمال کر نا پڑتاہے ۔اچھی کیڑے مار ادو یہ کے بغیر کسانوں کی کھادپرکی گئی سرمایہ کار ی ضائع ہوجاتی ہے نئی اگنے والی بوٹیاں ایک اچھی بوٹی مارسپرے سے جلدختم کی جاسکتی ہے بجائے ا س کے کہ ا س کو خوراک میں کمی لا کر کسی اورذریعے سے ختم کی جا ئے، کیونکہ یہ دوائی پود ے کی بیرونی جلد میں داخل ہوکر اپنا اثردیکھاتی ہے، بہت سی جڑی بوٹیاں کھادوں کے حصول کیلئے فصلوں کے پودوں سے بہتر مقابلے کی طاقت رکھتی ہے ا س لیے شروع کے چھڑکاؤ میں کھاد کااستعمال پودوں کی قطار اورخاص کر پودے کے بیج کے قریب رکھیں تا کہ و ہ کھاد سے بھر پور استفاد ہ حاصل کر سکے کھادوں کازمین پر ساد ہ طریقہ سے چڑھاؤکرنے سے جڑی بوٹیوں کااکثر ز یاد ہ فائد ہ حاصل ہوجاتاہے جڑ ی بوٹیاں زمین کے پی ایچ سے بھی متاثرہوتی ہیں، جڑی بوٹیوں میں ککروند ریڈ سور ل اوراس طرح کچھ مزیداقسام میں مٹی کی تیزابیت کو بر دا شت کرنے کی صلاحیت ہوتی ہے نائٹرو جن والی کھاد جڑی بوٹیوں کے تدار ک کیلئے بہت مفیدہے نائٹروجن پودوں کوتیزی سے بڑھنے میں مدددیتی ہے جبکہ پودوں کی نسبت جڑی بوٹیوں کوکم فائدہ ہوتاہے اس سے فصل میں مقابلہ کرنے کی صلاحیت میں اضافہ ہوتا ہے زمینی پیداواری صلاحیت بھی کیڑوں کی آبادی کومتاثرکرتی ہے زیادہ تر جڑی بوٹی مار کھاد کو موسم سرماخزان اوربہار کے شروع کے وقت میں چھڑ کاجاتا ہے کھادوں کا استعمال پودے کے نکلنے سے پہلے اوربعد میں کیاجاتا ہے جڑ ی بوٹی اورکیڑ ے ما ر ادو یہ کو پود ے کے شروع کے دنوں میں چھڑ کاجاتا ہے ا گر چھڑ کا ؤ کا وقت اورپودوں کے نکلنے کاوقت ایک ہو جا ئے اورمطابقت کا بھی کوئی مسئلہ نہ ہو تو کیڑ ے ما ر اورجڑی بوٹی مار ادو یہ کو کھاد میں ملا کر استعمال کیا جاسکتا ہے جڑی بوٹیوں کوختم کرنے اورفصل کو بہترخورا ک فراہم کر نے کا نظریہ کافی فروغ پاچکا ہے جڑی بوٹیوں پر قابو پالینا کیڑوں کے تدار ک کیلئے بہتر ہے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 14/03/2016 - 15:16:22

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں