تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ سال 2019 تک مکمل ہوجائیگا ‘وفاقی وزیر شاہد خاقان عباسی ..
تازہ ترین : 1

تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ سال 2019 تک مکمل ہوجائیگا ‘وفاقی وزیر شاہد خاقان عباسی ، 20 سے 25 ارب ڈالر لاگت آئے گی‘ ایران سے گیس کی درآمد کے معاہدے کو جلد حتمی شکل دی جائے گی‘انٹر ویو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13مارچ۔2016ء)وفاقی وزیر پیٹرولیم و قدرتی وسائل شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ سال 2019 تک مکمل ہوجائیگا ‘ 20 سے 25 ارب ڈالر لاگت آئے گی‘ ایران سے گیس کی درآمد کے معاہدے کو جلد حتمی شکل دی جائے گی۔ اپنے ایک انٹر ویو میں وفاقی وزیر پیٹرولیم و قدرتی وسائل شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت نے ایل پی جی سیکٹر کو ڈی ریگولیٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس سے صارفین کو فائدہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت توانائی کی قلت پر قابو پانے کے لیے گیس کے مختلف منصوبوں پر کام کر رہی ہے اور اس سلسلے میں ایل این جی کی درآمد زیادہ بہتر اور موثر ہے‘ ایل این جی کی درآمد کے لیے مزید پانچ نئے ٹرمینلز تعمیر کئے جائیں گے۔سسٹم میں گیس ایل این جی آنے کے بعد فرٹیلائزر سیکٹر نے ایک بار پھر پیداواری سرگرمیاں شروع کردی ہیں۔

وقت اشاعت : 13/03/2016 - 23:24:47

اپنی رائے کا اظہار کریں