پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت پہلے مرحلے کے توانائی منصوبے دسمبر 2017ء میں مکمل ..
تازہ ترین : 1

پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت پہلے مرحلے کے توانائی منصوبے دسمبر 2017ء میں مکمل کرلئے جائیں گے

چین کی کمپنیاں 10 ہزار میگاواٹ بجلی کے منصوبوں پر کام کر رہی ہیں،سی پیک منصوبے سے تھر کے مکینوں کی زندگیوں پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے ذرائع

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 مارچ۔2016ء)پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت پہلے مرحلے کے توانائی منصوبے دسمبر 2017ء میں مکمل کرلئے جائیں گے۔ وزارت منصوبہ بندی و ترقیات کے اعلیٰ حکام نے بتایا کہ سی پیک کے تحت توانائی منصوبوں کی تکمیل سے ملک میں سماجی اور اقتصادی ترقی میں تیزی آئے گی۔ انہوں نے بتایا کہ چین کی کمپنیاں 10 ہزار میگاواٹ بجلی کے حامل منصوبوں پر دن رات کام کر رہی ہیں جبکہ بجلی کی ٹرانسمیشن اور تقسیم کار لائنوں کی استعداد کار بڑھانے کے لئے بھی اپنی خدمات پیش کر رہی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ تھر میں کوئلے کے وسائل کو بروئے کار لانے اور چھ ہزار 600 میگاواٹ بجلی کی پیداوار کے لئے بھی پلانٹ کی تنصیب کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبے سے تھر کے مکینوں کی زندگیوں پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے اور ان کی سماجی اور اقتصادی حالت بہتر ہوگی۔

وقت اشاعت : 13/03/2016 - 15:01:40

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں