روسی اور برطانوی سیاحوں کے بغیرمصر کا سیاحتی شہر شرم الشیخ ویران ہو نے لگا
تازہ ترین : 1

روسی اور برطانوی سیاحوں کے بغیرمصر کا سیاحتی شہر شرم الشیخ ویران ہو نے لگا

قاہرہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 نومبر۔2015ء)روسی طیارے کے حادثے کے ماسکو سمیت دیگر ممالک کی جانب سے مصر میں فضائی سروس منقطع کیے جانے کے بعد مصر کا سیاحتی شہر شرم الشیخ سیاحوں کے بغیر ویران ہونے لگا۔عالمی میڈیا کے مطابق شرم الشیخ کے ہوٹلوں، دکانوں اور ریسٹورانوں کے مالکوں اور ٹورسٹ گائڈوں کا کہنا ہے کہ روسی اور برطانوی سیاحوں کے بغیر یہ شہر ویران ہو جائے گا۔

واضح رہے کہ 31 اکتوبر کو روسی سیاحوں کو لے جانے والا طیارہ شرم الشیخ کے ائیر پورٹ سے روانہ ہو کر جزیرنما سینائی میں گر گیا تھا۔ جس کے بعد روس نے مصر کے ساتھ فضائی رابطہ منقطع کر دیا گیا اور شرم الشیخ سے روسی سیاحوں کا انخلا جاری ہے۔شرم الشیخ کے ائیر پورٹ کے ایک اہلکار کے مطابق روسی طیارے کے حادثے سے پہلے ہر روز روس سے کم سے کم 20 طیارے آتے تھے۔ مصر کے سیاحتی ادارے کے مطابق مصر میں آنے والے سیاحوں میں 70 تا 83 فیصد برطانوی اور روسی سیاح تھے۔برطانیہ اور روس کے ساتھ مصر کا فضائی رابطہ منقطع کئے جانے کے بعد ان کی تعداد کم ہو کر صرف 30 فی صد ہو گئی ہے اور یہ تعداد دن بدن کم ہوتی جا رہی ہے کیوں کہ دوسرے ممالک کے خوف زدہ سیاح بھی مصر جانے سے انکار کرنے لگے ہیں۔

وقت اشاعت : 11/11/2015 - 14:39:02

اپنی رائے کا اظہار کریں