بلوچستان میں 650 گھوسٹ اسکولوں کا انکشاف
تازہ ترین : 1

بلوچستان میں 650 گھوسٹ اسکولوں کا انکشاف

فنڈنگ بھی بند، سیاسی بنیادوں پر بھرتی اساتذہ برطرف کریں گے، صوبائی وزیر

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 نومبر۔2015ء) بلوچستان حکومت نے650 ’گھوسٹ اسکولوں‘کو فنڈزکی فراہمی روکتے ہوئے 450 مسلسل غیرحاضر اساتذہ کو برطرف کردیا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صوبائی سیکریٹری برائے تعلیم عبد الشکورکاکڑ نے بتایا کہ حکام نے سیکڑوں ایسے اساتذہ کا سراغ لگایا جنھوں نے ایک دن بھی کسی اسکول میں نہیں پڑھایا لیکن وہ تنخواہ باقاعدگی سے وصول کر رہے تھے۔

زیادہ تر اسکول بھی صرف کاغذوں پر ہیں اورجو اسکول موجود ہیں وہاں استاد ہیں نہ کوئی طالبعلم۔صوبائی وزیر تعلیم رضا محمد بڑیچ نے اعداد و شمار کی تصدیق کی اورکہاکہ مزید اسکول اور اساتذہ بھی حکومتی کریک ڈاؤن کی زد میں آ سکتے ہیں، گزشتہ دور میں بہت سے اساتذہ سیاسی بنیادوں پر بھرتی ہوئے جنھیں ہم برطرف کر دیں گے۔ انھوں نے کہا کہ صوبے میں 12 ہزار 500 اسکول ہیں جن کا معیار بہتر بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 11/11/2015 - 11:50:30

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں