حکومت نے سرکلر ڈیٹ کو مقررہ ہدف کے اندر رکھنے کیلئے مختلف بینکوں سے 96ارب کاقرضہ ..
تازہ ترین : 1

حکومت نے سرکلر ڈیٹ کو مقررہ ہدف کے اندر رکھنے کیلئے مختلف بینکوں سے 96ارب کاقرضہ لینے کا فیصلہ

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 نومبر۔2015ء)حکومت نے سرکلر ڈیٹ کو مقررہ ہدف کے اندر رکھنے کے لئے مختلف بینکوں سے 96ارب روپے قرضہ لینے کا فیصلہ کرلیا، آئی ایم ایف سے معاہدے کے تحت سرکلر ڈیٹ تین سال میں ختم کیا جائے گا۔عالمی مالیاتی فنڈ سے معاہدے کے تحت حکومت گردشی قرضوں کا حجم 218ارب روپے سے کم رکھنے کی پابند ہے تاہم پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ 661ارب روپے تک پہنچ چکا ہے جس میں 356ارب روپے توانائی شعبے کے اور 335ارب روپے مختلف بینکوں اور پاور ہولڈنگ کمپنیوں کا قرضہ شامل ہے۔

گردشی قرضوں میں کمی کے لئے حکومت نے بینکوں اور پاور ہوڈنگ کمپنیوں سے مزید قرضہ لینے کا فیصلہ کیا ہے- حکومت نے عالمی مالیاتی فنڈ کو یقین دہانی کرائی ہے کہ مالی سال 2017ء تک گردشی قرضوں کا حجم 218ارب روپے تک لایا جائے گا جبکہ آئندہ سال اسے 204ارب روپے پر لایا جائے گا، اور تین سال میں یہ قرضہ بالکل ختم ہوجائے گا۔

وقت اشاعت : 10/11/2015 - 13:31:47

اپنی رائے کا اظہار کریں