1223میگا واٹ بلوکی پاور پلانٹ توانائی بحران کے خاتمہ میں مددگا رثابت ہوگا ‘ افتخار ..
تازہ ترین : 1

1223میگا واٹ بلوکی پاور پلانٹ توانائی بحران کے خاتمہ میں مددگا رثابت ہوگا ‘ افتخار بشیر

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 نومبر۔2015ء) تاجر رہنما و صدر گرائنڈنگ ملز ایسوسی ایشن پاکستان چوہدری افتخار بشیرنے کہا ہے کہ 1223میگا واٹ کا بلوکی پاور پلانٹ توانائی بحران کے خاتمہ میں مدد گار ثابت ہوگا، حکومت کی جانب سے یکے بعد دیگر تھرمل پاور پلانٹ، کول پاو ر پلانٹ اور سولر پاور پلانٹ کے منصوبے حکومت کی جانب سے توانائی بحران کے خاتمہ کی سنجیدہ کوششیں ہیں اور وہ دن دور نہیں جب لو ڈشیڈنگ کا خاتمہ ہوگا ،توانائی بحران کے خاتمہ کیلئے حکومتی کوششوں سے ملک کے اندر بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوگا حالیہ کامیاب سرمایہ کاری کانفرنس میں بیرونی سرمایہ کاریوں کی جانب سے 150معاہدووں کے بعد ملک کے اندر توانائی بحران کا خاتمہ از حدضروری ہوگیا ہے۔

چوہدری افتخار بشیر نے کہا کہ بجلی بحران کے خاتمہ کیلئے تمام دستیاب وسائل استعمال میں لائے جائیں اورتھرمل منصوبوں کے ساتھ ساتھ ہایئڈل منصوبے بھی شروع کیے جائیں اور سستی بجلی کے حصول کے لیے کالا باغ ڈیم کی تعمیر پر اتفاق رائے پیدا کیا جائے۔ پن بجلی توانائی بحران کے خاتمہ اور سستی بجلی کے حصول کا آسان ذریعہ ہے ،مہنگی بجلی سے صنعتکاروں کے ساتھ ساتھ عوام بھی پریشانی کا شکار ہیں ،انہوں نے کہا کہ کالا باغ ڈیم تعمیر نہ ہونے کی وجہ سے ملک میں سالانہ اربوں روپے کا نقصان ہورہا ہے چھوٹے ڈیم بنا کر پانی اور توانائی کے بحران کو کسی حد تک کم کیا جاسکتا ہے لیکن توانائی بحران کے خاتمہ کیلئے کالا باغ ڈیم کی تعمیر ناگزیر ہے ، کالاباغ ڈیم کا منصوبہ سستی ترین بجلی کے حصول اور زراعت کی ترقی کا باعث بنے گا۔

پاکستان کا مستقبل زراعت کی ترقی سے وابستہ ہے جب زراعت ترقی کرے گی تو صنعت کو وافر خام مال مہیا ہوگا اور چمنیوں سے نکلنا شروع ہوجائے گا ۔6.1ملین فٹ پانی کا ذخیرہ کرنے والے کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے ملک میں صنعتی ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔

وقت اشاعت : 09/11/2015 - 14:06:30

اپنی رائے کا اظہار کریں