چوہدری سرور کی قیادت میں تحر یک انصاف کا کار کنوں کی ٹارگٹ کلنگ کے خلاف احتجاجی ..
تازہ ترین : 1

چوہدری سرور کی قیادت میں تحر یک انصاف کا کار کنوں کی ٹارگٹ کلنگ کے خلاف احتجاجی دھر نا، چوہدری سرور نے آئندہ کسی بھی کارکن کی ٹارگٹ کلنگ پرلاہور کو جام اور پورے پنجاب میں احتجاجی دھر نوں کی دھمکی دیدی ، ڈی آئی آپر یشنز حیدر اشرف کی جانب سے قاتلوں کی گر فتاری کی یقین دہانی کے بعد تحر یک انصاف نے احتجاج ختم کر دیا،تحریک انصاف کے قتل ہونیوالے کارکنوں کے ورثاء اور انکے بچوں کی چیخیں وزیر اعظم اور وزیر اعلی کو بھی سن لینی چاہیے اورپولیس کو فوی طور پرحکم دیں کہ وہ قاتلوں کو گر فتار کر یں‘حکمرانوں کو اپنے غنڈوں اور بدمعاشوں کو لگام دینا ہوگی ورنہ ہم پھر سڑکوں پر آنے پر مجبور آئیں گے ‘چوہدری محمدسرور کی گفتگو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8نومبر۔2015ء)تحر یک انصاف پنجاب کے آرگنائزر چوہدری محمدسرور کی قیادت میں تحر یک انصاف کا کار کنوں کی ٹارگٹ کلنگ اور(ن) لیگیوں کی فائر نگ سے کارکن محمدحیات کے قتل کے خلاف گورنر ہاؤس کے باہر لاش کو سڑک پر رکھ کر احتجاجی دھر نہ ‘ چوہدری محمدسرور نے آئندہ کسی بھی کارکن کی ٹارگٹ کلنگ پرلاہور کو جام کر نے اور پورے پنجاب میں احتجاجی دھر نوں کی دھمکی دیدی جبکہ ڈی آئی آپر یشنز ڈاکٹر حیدر اشرف کی جانب سے قاتلوں کی گر فتاری کی یقین دہانی کے بعد تحر یک انصاف نے احتجاج ختم کر دیا ۔

تفصیلات کے مطابق یوسی 105میں (ن) لیگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے فائر نگ کر کے تحر یک انصاف کے حیات نامی کارکن سمیت دیگر کو فائرنگ کے ذریعے نشانہ بنا یا جسکے بعد حیات کو لاہور کے جناح ہسپتال میں داخل کروادیا گیا مگر اتوار کے روز حیات زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا جس پرمذکورہ کارکنوں کی فیملی سمیت تحریک انصاف کے سینکڑوں کارکنان نے تحریک انصاف کے آرگنائزر چوہدری محمد سرور کی قیادت میں گور نر ہاؤس لاہور کے باہر کارکن حیات کی لاش کو سڑک پر رکھ کراحتجاجی دھر نہ دیا جس میں کارکنان پنجاب حکو مت‘(ن) لیگ اور پو لیس کے خلاف نعر ے بازی کرتے رہے جبکہ اس موقعہ پر رکن پنجاب اسمبلی شعیب احمد صدیقی ‘حافظ فر حت عباس‘چےئرمین کے ایڈوئزر اعجاز چوہدری ‘رکن پنجاب اسمبلی سعدیہ سہیل اور شانیلا علی سمیت د یگر قائدین بھی موجود تھے اس موقعہ پر میڈیا سے گفتگواور کارکنوں سے خطاب میں تحر یک انصاف پنجاب کے آرگنائزرچوہدری محمدسرور نے کہا کہ پنجاب میں تحر یک انصاف کے11کارکنوں کو ٹارگٹ کلنگ کے ذریعے قتل کیا جا چکا ہے ‘پنجاب کے حکمران اور پو لیس ہمارے صبر کا امتحان نہ لیں۔

انہوں نے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکمران تحر یک انصاف کی بڑھتی ہوئی مقبولیت سے خوفزدہ ہیں باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت تحر یک انصاف کے کارکنوں کو قتل کیا جا رہا ہے جسکو کسی صورت برداشت نہیں کیا جا ئیگا اگر پولیس نے فوری طور پر قاتلوں کو گر فتار نہ کیا تو تحر یک انصاف کے پاس سڑکوں پر اپنے مطالبات کیلئے احتجاج کر نے کے علاوہ کوئی آپشن نہیں بچے گا پنجاب میں تحر یک انصاف کے کارکنوں کا قتل معمول بن چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ تحر یک انصاف کے کارکنوں کو قتل کر نیوالوں کوپنجاب حکومت اور (ن) لیگ کی پشت پناہی حاصل ہے اور ہم واضح کردینا چاہتے ہیں اگر آج کے بعد تحر یک انصاف کے ایک بھی کارکن کا قتل ہوا تو ہم نے بہت صبر کر لیا پھر ہم پورے لاہورکی ہر گلی ‘محلے کو جام کردیں گے اور پورے ملک میں احتجاج کی کال دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے قتل ہونیوالے کارکنوں کے ورثاء اور انکے بچوں کی چیخیں وزیر اعظم اور وزیر اعلی کو بھی سن لینی چاہیے اور پولیس کو فوی طور پرحکم دیں کہ وہ قاتلوں کو گر فتار کر یں ۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کسی قسم کی محاذآرائی نہیں چاہتی مگراسکے باوجود (ن) لیگ کے غنڈے اور بد معاش باز نہیں آرہے حکمرانوں کو اپنے غنڈوں اور بدمعاشوں کو لگام دینا ہوگی ورنہ تحریک انصاف ایک بار پھر سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوگی ۔تحر یک انصاف چےئر مین کے ایڈوئزر اعجاز چوہدری نے کہا کہ پنجاب کے حکمران قاتل بن چکے ہیں جو تحر یک انصاف کے کارکنوں کو سر عا قتل کر رہے ہیں اور پو لیس بھی (ن) لیگ کے ساتھ مل چکی ہے ۔انہوں نے کہا کہ تحر یک انصاف اپنے کارکنوں کی لاشیں اٹھا اٹھا کرتھک چکی ہے مگر اب ہم خاموش نہیں رہیں گے اور قاتلوں کو انکے انجام تک پہنچانے کیلئے احتجاج سمیت ہرآئینی راستہ اختیار کیا جائیگا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 08/11/2015 - 18:46:08

اپنی رائے کا اظہار کریں