کاشتکار فی ایکڑ پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ کیلئے جدید ذرائع آبپاشی استعمال کریں،ماہرین ..
تازہ ترین : 1

کاشتکار فی ایکڑ پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ کیلئے جدید ذرائع آبپاشی استعمال کریں،ماہرین

فیصل آباد۔(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 نومبر۔2015ء)جدید ذرائع آبپاشی استعمال کرنے والے کاشتکاروں کی پیداوار روایتی طریقوں پر انحصار کرنے والے کاشتکاروں کے مقابلے میں دو گنا ہو گئی ہے اور وہ عام کاشتکاروں کی نسبت 25 سے30من فی ایکڑ گندم کی بجائے 50 سے60من فی ایکڑ تک گندم سمیت دیگر زرعی اجناس کی پیداوار حاصل کررہے ہیں لہٰذا کاشتکاروں کو چاہیے کہ وہ روائتی طریقوں پر انحصارکرنے کی بجائے جدید ذرائع آبپاشی سے استفادہ کریں تاکہ ان کی فی ایکڑ پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ ہو سکے ۔

محکمہ اصلاح آبپاشی فیصل آباد کے ترجمان نے اتوار کے روز یہاں بتایاکہ اگرچہ پنجاب میں بالخصوص جبکہ ملک بھر میں بالعموم گندم کا زیرکاشت 90فیصد رقبہ آبپاش ہے مگر پھر بھی آبپاشی کیلئے پانی کے درست استعمال نہ ہونے ، پانی کے ضیاع اور ٹیل تک پانی کی کم مقدار پہنچنے سے فصلات کو ضرورت کے مطابق پانی نہیں ملتاہے جس سے فصل کی پیداوارکم ہو رہی ہے چونکہ پانی کی کمی کامسئلہ آہستہ آہستہ بڑھتا جارہاہے لہٰذا کاشتکاروں کو چاہیے کہ وہ ماہرین اصلاح آبپاشی اور زرعی سائنسدانوں کی ہدایات کے مطابق جدید ذرائع آبپاشی سے استفادہ کریں تاکہ پانی کی کمی سے نمٹنے کے ساتھ میسر پانی میں اچھی پیداوار حاصل کی جا سکے۔

وقت اشاعت : 08/11/2015 - 16:52:33

اپنی رائے کا اظہار کریں