ہائیکورٹ نے رمضان المبارک میں اشیائے خوردونوش کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے ..
تازہ ترین : 1

ہائیکورٹ نے رمضان المبارک میں اشیائے خوردونوش کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے حکومتی اقدامات کی تفصیلی رپورٹ طلب کر لی

رمضان المبارک میں حکومت نے عوام کو کیا ریلیف دیا ،عدالت کا سیکرٹری انڈسٹریز سے استفسار،گھی کی قیمتوں میں کمی کی گئی ‘ نسیم صادق کا جواب گھی کی قیمتوں میں کمی میں حکومت کا کوئی کمال نہیں یہ عالمی منڈی میں پام آئل کی قیمت کم ہونے کے باعث ہوئی ‘ جسٹس فرخ عرفان خان

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 15 جون۔2015ء) لاہور ہائیکورٹ نے اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف دائر درخواست پر رمضان المبارک میں قیمتوں کو کنٹرول کرنے کے لئے حکومتی اقدامات کی تفصیلی رپورٹ طلب کر لی ۔ جبکہ فاضل عدالت نے دوران سماعت قرار دیا ہے کہ گھی کی قیمتوں میں کمی میں حکومت کا کوئی کمال نہیں یہ کمی عالمی منڈی میں پام آئل کی قیمت کم ہونے کے باعث ہوئی ہے ۔

گزشتہ روز لاہو رہائیکورٹ کے جسٹس فرخ عرفان خان نے جوڈیشل ایکٹوازم پینل کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی ۔ اظہر صدیق ایڈوکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ رمضان المبارک سے قبل روز مرہ استعمال کی اشیاء چاول‘ گھی ‘ چینی ‘ آٹا اور بیسن وغیرہ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہو چکا ہے اور حکومت قیمتوں کو کنٹرول کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے ۔

عدالتی حکومت پر سیکرٹری انڈسٹریز نسیم صادق نے پیش ہو کر بتایا کہ قیمتوں میں کمی کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جارہے ہیں۔ جس پر عدالت نے انہیں ہدایت کی کہ وہ آئندہ سماعت پر صوبہ بھر کا ڈیٹا فراہم کریں جس سے معلوم ہو سکے کہ قیمتوں کو کیسے کنٹرول کیا جارہا ہے ۔ عدالت نے قرا ر دیا کہ آپ چین کو دیکھیں کہ اتنی بڑی آبادی والا ملک کیسے قیمتوں کو کنٹرول کرتا ہے ۔

عدالت نے سیکرٹری انڈسٹریز سے استفسار کیا کہ رمضان المبارک میں حکومت نے عوام کو کیا ریلیف دیا ہے جس پر نسیم صادق نے کہا کہ حکومت نے گھی کی قیمتوں میں کمی کی ہے ۔ عدالت نے قرار دیا کہ گھی کی قیمت کم ہونے میں حکومت کا کوئی کمال نہیں ، یہ کمی عالمی منڈی میں پام آئل کی قیمت کم ہونے کے باعث ہوئی ہے ۔ عدالت نے مزید سماعت 18جون تک ملتوی کرتے ہوئے قیمتوں کو کنٹرول کرنے سے متعلق تفصیلی رپورٹ طلب کر لی۔

وقت اشاعت : 15/06/2015 - 17:31:30

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں