بلوچستان کے مزید 2 فراری کمانڈرز نے ساتھیوں سمیت ہتھیار ڈال دیئے
بلوچستان کے مزید 2 فراری کمانڈرز نے ساتھیوں سمیت ہتھیار ڈال دیئے

بلوچستان کے مزید 2 فراری کمانڈرز نے ساتھیوں سمیت ہتھیار ڈال دیئے

خضدار: بلوچستان کے مزید 2 فراری کمانڈرز نے ساتھیوں سمیت صوبائی وزیرنواب ثناءاللہ زہری کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے۔ خضدار میں صوبائی وزیرکے سامنے ہتھیارڈالنے والوں میں عبیداللہ عرب ببرک اور دین جان عرف میران محمد حسنی شامل ہیں جن کا تعلق کالعدم تنظیم لشکر بلوچستان اور کالعدم تنظیم بلوچ لبریشن فرنٹ سے ہے جنہوں نے ہتھیار ڈالتے ہوئے اعلان کیا کہ وہ ملک کے خلاف جاری سرگرمیوں کو ترک کردیں گے۔

اس موقع پر ان کے ہمراہ 57 ساتھیوں نے بھی ہتھیار ڈال دیئے۔ فراری کمانڈرعبیداللہ ببرک کا کہنا تھا کہ ہمیں ملک دشمن سردار آزادی کے نام پر دھوکا دیتے ہیں جب کہ حکومت پاکستان بلوچوں کا خاص خیال رکھتی ہے اور بلوچوں کو ملک کے خلاف اکسانے والے سرداروں میں ایک بھائی حکومت میں شامل ہے اور دوسرا بیرون ملک بیٹھ کر ملک دشمنی کر رہا ہے، یہی ملک دشمن ہمیں آزادی کے نام پر اندھیروں میں دھکیلتے رہے۔

انہوں نے اعلان کیا کہ وہ باعزت پاکستانی اورامن پسند بلوچ کی حیثیت سے زندگی گزارنے کا وعدہ کرتے ہیں۔ اس موقع پرنواب ثنااللہ زہری کا کہنا تھا کہ آزادی کے نام پر بلوچوں کو بھٹکانے والے خود بیرون ملک بیٹھ کر بلوچ نوجوانوں کو آزادی کے نام پر بغاوت پر اکساتے ہیں، بلوچ نوجوان بیرونی طاقتوں کے بہکاوے میں نہ آئیں اور ان کے سرغنہ لندن کی ٹھنڈی ہواؤں کو چھوڑ کر یہاں آئیں اور ناراض بلوچ پہاڑوں سے واپس آجائیں انہیں خوش آمدید کہیں گے۔

وقت اشاعت : 14/06/2015 - 18:14:11

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں