قومی ہاکی پلیئرز نے پی ایس بی کے 20 ڈالر معاوضے کی پیشکش مسترد کردی
تازہ ترین : 1
قومی ہاکی پلیئرز نے پی ایس بی کے 20 ڈالر معاوضے کی پیشکش مسترد کردی

قومی ہاکی پلیئرز نے پی ایس بی کے 20 ڈالر معاوضے کی پیشکش مسترد کردی

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔14جون۔2015ء) قومی ہاکی پلیئرز نے پاکستان سپورٹس بورڈ کے 20 ڈالر معاوضے کی پیشکش کو مسترد کردیا، پی ایچ ایف قوانین کے مطابق کھلاڑیوں کو 150 ڈالر یومیہ ملنے چاہئیں، کم ادائیگی پر بغیر کسی اجرت کے ملک کے لیے کھیلنے کو ترجیح دیں گے۔مالی مشکلات کا شکار پی ایچ ایف کو ایک اور بڑی مشکل نے گھیر لیا، وہ ہاکی کھلاڑیوں اور عہدیداروں کی ایک کروڑ روپے سے زیادہ کی مقروض ہو گئی، آسٹریلیا، کوریا کے دوروں اور بیلجیئم میں ورلڈ ہاکی لیگ کھیلنے کے بعد پی ایچ ایف کو6لاکھ روپے فی کھلاڑی کے حساب سے ادائیگیاں کرنی ہیں۔

ذرائع کے مطابق رواں ماہ انٹورپ میں شیڈول اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ کے لیے ہر کھلاڑی کو پی ایس بی کی طرف سے20 ڈالر یومیہ کی پیشکش ہوئی لیکن پلیئرز نے باہمی مشاورت کے بعد فیصلہ کیا کہ وہ اپنی اجرت پوری لیں گے، اگر مطالبہ پورا نہ ہوا توبغیر معاوضوں کے ہی ملکی نمائندگی کو ترجیح دیں گے۔ واضح رہے کہ پی ایچ ایف قانون کے مطابق انٹرنیشنل ایونٹس کے موقع پر ہر کھلاڑی اور آفیشلز کو150ڈالر یومیہ کے حساب سے ادائیگیاں کی جاتی ہے، پاکستان اسپورٹس بورڈ نے پی ایچ ایف کی مالی مشکلات کو دیکھتے ہوئے گرین شرٹس کو اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ کیلیے اسپانسر کیا، اس نے اپنی پالیسی کے مطابق پلیئرز اور آفیشلز کے لیے 20 ڈالردینے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید معلوم ہوا ہے کہ پلیئرز کو آسٹریلیا اور کوریا کے دوروں کی بھی 2 لاکھ 85ہزار کی ادائیگی نہیں ہو سکی، اس طرح قومی ٹیم کے اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ میں 21روزہ دورے کے 3 لاکھ 15ہزار روپے بنتے ہیں، اس حساب سے پی ایچ ایف قومی ٹیم کے ہر کھلاڑی کی 6 لاکھ روپے کی مقروض ہوگی۔ذرائع کے مطابق کھلاڑیوں کو کیمپ کے بھی 10 ہزار روپے فی کس تاحال نہیں ملے۔

وقت اشاعت : 14/06/2015 - 13:48:15

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں