`عوامی تحریک پنجاب کی ایگزیکٹو کونسل کا اجلاس
تازہ ترین : 1

`عوامی تحریک پنجاب کی ایگزیکٹو کونسل کا اجلاس

آپریشن ضرب عضب کے ایک سال مکمل ہونے پر پاک فوج کوخراج تحسین جے آئی ٹی کی رپورٹ کے خلاف کل14 جون 10 شہروں میں احتجاجی مظاہرے ہونگے ”سادگی پسند“ خادم اعلیٰ نے سی ایم سیکرٹریٹ کے اخراجات میں204فی صد اضافہ کر دیا اجلاس میں ڈاکٹر رحیق عباسی ، بشارت جسپال کا خطاب،16جون کے احتجاجی جلسہ کے انتظامات پر غور`

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 13 جون۔2015ء) پاکستان عوامی تحریک سنٹرل پنجاب کے ایگزیکٹو کونسل کے اجلاس میں آپریشن ضرب عضب کے ایک سال مکمل ہونے اور دہشت گردوں کے خلاف قابل ذکر کامیابیوں پر پاک فوج کوخراج تحسین پیش کیا گیا اور آپریشن ضرب عضب میں شہید ہونیوالے جوانوں اور افسران کی درجات کی بلندی کیلئے دعا کی گئی ۔اجلاس کی صدار ت مرکزی صدر ڈاکٹر رحیق احمد عباسی نے کی ،اجلاس میں صوبائی صدر بشارت جسپال ،تنویر اعظم سندھو ،راجہ زاہد ،حاجی ولایت قیصر ،میاں عبد القادر،راجہ ندیم و دیگر رہنماؤں نے شرکت کی ۔

ڈاکٹر رحیق عباسی نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کی کامیابی کیلئے پوری قوم دعا گو ہے ،انشا اللہ بہت جلد وطن عزیز کا چپہ چپہ دہشت گردی کے ناسور سے پاک ہو جائے گا ۔ایگزیکٹو کونسل کے اجلاس میں بتایا گیا کہ عوامی تحریک آج 14جون پاکستان کے 10شہروں اسلام آباد،ایبٹ آباد،ڈی آئی خان،گھوٹکی،حیدر آباد،کراچی ،لاڑکانہ ،کوئٹہ ،سبی اور ڈیرہ اللہ یار میں جے آئی ٹی کی رپورٹ کے خلاف احتجاجی مظاہرے کر ے گی ،اجلاس میں مرکزی صدر ڈاکٹر رحیق عباسی نے بتایا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ایک سال مکمل ہونے پر 16جون کو ہونیوالے احتجاجی جلسے سے سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری خطاب کریں گے ۔

آئندہ کے لائحہ عمل کریں اعلان کریں گے ،اجلاس میں 16جون کے احتجاجی ،تعزیتی جلسہ کے انتظامات پر بھی تفصیلی غور کیا گیا ،اجلاس میں پنجاب حکومت کے بجٹ کو عوام دشمن قرار دیتے ہوئے صوبائی صدر بشارت جسپال نے کہا کہ وزیر اعلیٰ ہاؤس کے اخراجات میں 204فی صد اضافہ ،سادگی کے نعروں کی نفی ہے ،سی ایم سیکرٹریٹ کا بجٹ 21کروڑ 99لاکھ 35ہزار مختص کیا گیا تھا جبکہ’ ’ سادگی پسند“ خادم اعلیٰ نے 45کروڑ 17لاکھ 6ہزار خرچ کر ڈالے جو مختص شدہ بجٹ سے 204فی صد زیادہ ہیں،دنیا کے اس مہنگے ترین خادم کا نام گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں درج ہونا چاہیے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ کے میٹرو بس جیسے فینسی منصوبوں کی وجہ سے پنجاب نے رواں سال 17ارب روپیہ سود ادا کیا ،حالانکہ عوام کے خون پسینے کی کمائی کا یہ قیمتی پیسہ تعلیم ،صحت اور صاف پانی کی فراہمی کے منصوبوں پر خرچ ہونا چاہیے ،انہوں نے کہا کہ ن لیگ مزید برسر اقتدار رہی تو آنے والی نسلوں کا بال بال قرضوں میں جکڑتا چلا جائے گا ۔

وقت اشاعت : 13/06/2015 - 21:34:23

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں