وزیراعظم نوازشریف کی جانب سے ماورائے عدالت قتل کئے جانے والے کراچی کے شہریوں ..
تازہ ترین : 1

وزیراعظم نوازشریف کی جانب سے ماورائے عدالت قتل کئے جانے والے کراچی کے شہریوں کومکھی قرارد یناقابل مذمت ہے۔رابطہ کمیٹی متحدہ قومی موومنٹ

ماورائے عدالت قتل پراگرنہ صوبائی حکومت انصاف فراہم کرے تو ایم کیوایم کے پاس پرامن احتجاج یاہڑتال کرنے کے سوااورکیاچارہ رہ جاتاہے ؟ رابطہ کمیٹی

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 12 جون۔2015ء) متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے وزیراعظم نوازشریف کی جانب سے کراچی میں پولیس،رینجرزاوردیگرسرکاری اداروں کے ہاتھوں ماورائے عدالت قتل کئے جانے والے کراچی کے شہریوں کومکھی قراردینے کی شدیدمذمت کی ہے ۔ اپنے ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کراچی کے شہریوں کو ہڑتالوں کاکوئی شوق نہیں اورکوئی بھی خوشی سے احتجاج اورہڑتال نہیں کرتا۔

اگرپولیس، رینجرزاور دیگر سرکاری ایجنسیوں کے اہلکار ایم کیوایم کے معصوم وبے گناہ کارکنوں کوگرفتارکریں اورانہیں عدالتوں میں پیش کرنے کے بجائے سرکاری حراست میں وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنائیں اورتشددکرکے ماردیں، اس کھلے ظلم پر نہ پولیس ،رینجرزاوراداروں کے حکام سنیں، نہ صوبائی حکومت انصاف فراہم کرے نہ ہی وفاقی حکومت اس کانوٹس لے تو ایم کیوایم کے پاس اپنے بے گناہ کارکنوں اورہمدردوں کے ماورائے عدالت قتل پرپرامن احتجاج یاہڑتال کرنے کے سوااورکیاچارہ رہ جاتاہے ؟ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ یہ امرافسوسناک ہے کہ وزیراعظم نوازشریف ایک جانب تو مظلوموں کی دہائیاں سننے کیلئے تیارنہیں ہیں اورجب ماورائے عدالت قتل پر احتجاج ہوتو وزیراعظم یہ کہہ رہے ہیں کہ ’’ کراچی میں مکھی بھی مرجائے تواحتجاج اورہڑتال کی جاتی ہے ‘‘ ۔

رابطہ کمیٹی نے کہاکہ وزیراعظم نوازشریف کے یہ خیالات نہ صرف سراسر افسوسناک ہیں بلکہ ماورائے عدالت قتل کئے جانے والے معصوم وبے گناہ افرادکے لواحقین کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہیں۔ رابطہ کمیٹی نے سوال کیا کہ کیا وزیراعظم کی نظرمیں کراچی کے معصوم شہری انسان نہیں بلکہ مکھی ہیں ؟ کیاکراچی کے معصوم وبے گناہ انسانوں کی کوئی حیثیت نہیں ہے؟ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ وزیراعظم نوازشریف اپنے الفاظ واپس لیں اوراپنے ان الفاظ پر کراچی کے شہریوں سے معافی مانگیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/06/2015 - 22:49:26

اپنی رائے کا اظہار کریں