قیام امن کی کوششیں اور مخاصمانہ رویہ ایک ساتھ نہیں چل سکتے،میر واعظ عمر فاروق ..
تازہ ترین : 1

قیام امن کی کوششیں اور مخاصمانہ رویہ ایک ساتھ نہیں چل سکتے،میر واعظ عمر فاروق ،

پاکستان اور بھارت مسئلے کے دائمی حل کے لئے کشمیری قیادت کے ساتھ مل کر مذاکرات کو ترجیح دیں، اجلاس سے خطاب

سرینگر(اُردو پوائنٹ اخبارتاز ترین ۔ 1جنوری 2015ء)کل جماعتی حریت کانفرنس”ع“ گروپ کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ کشمیر ایک مسئلہ ہے اور کسی بھی انتخابی عمل سے اس کی تاریخی اور سیاہیت بدلی ہے اور نہ ہی بدلے گی ۔سیاسی شوروغل میں کشمیریوں کی تحریک مزاحمت کے ساتھ وابستگی اور ان کے عزم کو نہ تو ماضی میں دبایا جا سکا ہے اور نہ مستقبل میں طاقت اور قوت کے بل پر اس عزم کو دبایا جا سکتا ہے۔

حریت کی ایگزیکٹو کونسل ،جنرل کونسل اور ورکنگ کمیٹی کا مشترکہ اجلاس میرواعظ عمر فاروق کی صدارت میں حریت صدر دفتر پر منعقد ہوا جس میں حریت کی جملہ اکائیوں کے سربراہوں اور نمائندوں نے شرکت کی ۔اجلاس میں جموں و کشمیر کی موجودہ سیاس صورت حال خاص طور پر حالیہ انتخابات کے بعد وقوع پذیر ہو رہی ہے ۔سیاسی تبدیلیوں پر تفصیل کے ساتھ تبادلہ خیال کیا گیا ۔

اجلاس میں حریت کے آئینی موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا گیا کہ حریت کانفرنس اس صورت حال سے نمٹنے کے لئے ہر سطح پر فعالیت پیدا کرنے کی کوشش کرے گی ۔اجلاس میں بھارت کی سیاسی قیادت پر زور دیا گیا کہ جموں و کشمیر کے عوام کے مفادات اور مستقبل کو اپنی سیاست کاری کی نذر کرنے کے بجائے اس مسئلے کا کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق ایک دائمی حل کے لئے پاکستان اور کشمیری قیادت کے ساتھ بامعنی اور جامع مذاکراتی عمل کو ترجیح دیں تا کہ جنوبی ایشیائی خطے میں امن قائم ہو سکے اور اس خطے کے کروڑوں عوام کے محفوظ مستقبل کی جانب سے قدم بڑھایا جا سکے

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 01/01/2015 - 12:54:56

اس خبر پر آپ کی رائے‎