چار سدہ ، سکھ برادری سے تعلق رکھنے والے ایک حکیم کو نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ ..
تازہ ترین : 1

چار سدہ ، سکھ برادری سے تعلق رکھنے والے ایک حکیم کو نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا

چار سدہ (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 23جنوری 2014ء)چارسدہ میں سکھ برادری سے تعلق رکھنے والے ایک حکیم کو نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا ۔پولیس کے مطابق یہ واقعہ گزشتہ روزچارسدہ کے علاقے تنگی میں اس وقت پیش آیا جب پشاور سے تعلق رکھنے والے ایک سکھ حکیم بھگوان سنگھ گھر جا رہے تھے۔پولیس کے مطابق نامعلوم مسلح افراد نے ان پر اندھا دھند فائرنگ کردی جس سے وہ ہلاک ہوئے۔

چارسدہ کے ضلعی پولیس سربراہ شفیع اللہ خان نے بتایا کہ مقتول علاقے میں حکمت کا کام کرتے تھے اور ان کا تنگی اّڈہ میں چھوٹی سی دوکان تھی۔ضلعی پولیس سربراہ کے مطابق وہ روزانہ پشاور سے اپنی دکان پر آیا کرتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ مقتول علاقے میں خواتین کے علاج معالجے کیلئے مشہور سمجھے جاتے ہیں۔پولیس افسر نے کہا کہ اس واقعہ کی وجہ فوری طورپر معلوم نہیں ہوسکی اور نہ ہی کسی تنظیم نے اس کی ذمہ داری قبول کی ہے۔مقتول کے صاحبزادے نے تنگی پولیس کو دئیے گئے بیان میں کہا کہ ان کی کسی سے دشمنی یا لین دین کا کوئی تنازع نہیں تھا۔واضح رہے کہ نومبر 2008 میں قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں ایک سکھ حکیم کی لاش ملی تھی جنہیں سر میں گولیاں مار کر قتل کیا گیا تھا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 23/01/2014 - 16:09:47

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں