شام میں امن کے متعلق جنیوا میں جاری مزاکرات کامیاب نہیں ہوسکتے ، ایرانی صدر حسن ..
تازہ ترین : 1

شام میں امن کے متعلق جنیوا میں جاری مزاکرات کامیاب نہیں ہوسکتے ، ایرانی صدر حسن روحانی

ڈیووس (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 23جنوری 2014ء)ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ شام میں امن کے متعلق جنیوا میں جاری مزاکرات کامیاب نہیں ہوسکتے ،کانفرنس میں شریک کچھ فریق دمشق میں امن نہیں چاہتے ہیں۔عالمی اقتصادی فورم میں شرکت کیلئے ڈیووس جانے سے پہلے حسن روحانی نے تہران میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جنیوا کانفرنس میں شریک کچھ عناصر نے شام میں تشدد پھیلانے میں اہم کردار ادا کیا، وہ نہیں چاہتے کہ پڑوسی ملک میں امن قائم ہو۔

حسن روحانی کا کہنا تھا کہ ایران کی خواہش ہے کہ شام میں امن قائم ہو اور تمام فریقین پرامن طریقے سے رہیں۔دوسری جانب ایک انٹرویو میں صدر حسن روحانی نے کہاکہ ماضی میں ایران اور امریکا کے تعلقات سرد مہری کا شکار رہے تاہم دونوں ممالک کوششوں سے آپس کے حالات میں بہتری لا سکتے ہیں، اس مقصد کیلئے ضروری ہے کہ ایک دوسرے پر اعتماد کیا جائے اور ایران امریکا سمیت پوری دنیا سے دوستانہ تعلقات کے لئے کوششیں کر رہا ہے۔

ایران میں امریکی سفارتخانے کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں حسن روحانی نے کہا کہ کوئی بھی کسی کا ازلی دشمن ہوتا ہے اور نہ ازلی دوست اس لئے ہمیں آپس کی نفرتیں ختم کر کے ایک دوسرے کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھانا چاہیے ایرانی صدر نے کہا کہ جنیوا میں شام میں امن کے حوالے سے ہونے والی کا نفرنس پر کوئی حتمی بیان جاری نہیں کیا جا سکتا تاہم ایران کی خواہش ہے کہ جینوا ٹو کانفرنس میں شامی عوام کی خواہشات کو مد نظر رکھا جائے ان کا سعودی عرب اور قطر کو شام کے حوالے سے شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہنا تھا کہ دونوں ممالک شام میں باغیوں کی مدد کر رہے ہیں، دونوں ممالک مشرق وسطی میں اپنا اثرورسوخ چاہتے ہیں۔

وقت اشاعت : 23/01/2014 - 13:19:48

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں