سپریم کورٹ نے لاپتہ افراد کیس میں آمنہ مسعود جنجوعہ کو سرکار کی جانب سے پیش کی ..
تازہ ترین : 1

سپریم کورٹ نے لاپتہ افراد کیس میں آمنہ مسعود جنجوعہ کو سرکار کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ کا جائزہ لینے کی اجازت دیدی،بریگیڈئیر سید اطہر کا بیان حلفی تصدیق شدہ نہیں، دوبارہ جمع کرایا جائے ، عدالت عظمیٰ ،علیٰ عدالت نے حکومت پنجاب اور پولیس سے بھی رپورٹ اور گمشدگی کی ایف آئی آر کی نقل طلب کرلی

اسلام آبا د(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔13 جنوری ۔2014ء)سپریم کورٹ نے لاپتہ افراد کیس میں آمنہ مسعود جنجوعہ کو سرکار کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ کا جائزہ لینے کی اجازت دیدی۔ پیر کولاپتا افراد کیس کی سماعت کے دوران مسعود جنجوعہ کی گمشدگی کے حوالے سے اسٹنٹ ڈائریکٹر لیگل عرفان احمد نے رپورٹ پیش کی، ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق کھوکھر نے سپریم کورٹ سیاستدعا کی کہ رپورٹ خفیہ رکھی جائے جس پر جسٹس جواد نے کہا کہ رپورٹ میں ایسی کوئی بات نہیں جو خفیہ رکھی جائے اور عدالت نے آمنہ مسعود جنجوعہ کو رپورٹ کا جائزہ لینے کی اجازت دیتے ہوئے حکم دیا کہ بریگیڈئیر سید اطہر کا بیان حلفی تصدیق شدہ نہیں، دوبارہ جمع کرایا جائے۔

اعلیٰ عدالت نے حکومت پنجاب اور پولیس سے بھی رپورٹ اور گمشدگی کی ایف آئی آر کی نقل طلب کرتے ہوئے سماعت تین ہفتے کیلئے ملتوی کردی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 13/01/2014 - 21:52:04

اپنی رائے کا اظہار کریں