قائمہ کمیٹی پارلیمانی امور کا بلدیاتی انتخابات سے قبل مردم شماری کا مطالبہ
تازہ ترین : 1

قائمہ کمیٹی پارلیمانی امور کا بلدیاتی انتخابات سے قبل مردم شماری کا مطالبہ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 13جنوری 2014ء)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پارلیمانی امور نے بلدیاتی الیکشن سے پہلے مردم شماری کا مطالبہ کر دیا،دوسری طرف الیکشن کمیشن نے مردم شماری پر رضا مندی ظاہر کر دی ہے۔ قومی اسمبلی میں الیکشن کمیشن کی قائمہ کمیٹی کا اجلاس میاں عبدالمنان کی زیر صدارت ہوا جس میں نادرا اور الیکشن کمیشن حکام نے شرکت کی۔

پارلیمانی امور کی کمیٹی کا موقف تھا کہ بلدیاتی الیکشن کی ساکھ تب ہو گی جب نئی مردم شماری ہو گی۔ایڈیشنل سیکریٹری الیکشن کمیشن شیرافگن نے پارلیمانی امور کی کمیٹی کے موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا اب تو جنگل بھی آبادی میں تبدیل ہو چکے ہیں،مردم شماری کی ضرورت ہے۔انہوں اجلاس کے شرکا کو بتایا کہ خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کے دوران بائیو میٹرک نظام صرف انگوٹھوں کی شناخت تک محدود ہو گا۔

مکمل الیکٹرانک سسٹم کا استعمال 2018 کے انتخابات میں کیا جائے گا۔قائمہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے ایڈیشنل سیکریٹری الیکشن کمیشن شیر افگن نے بتایا جہاں تک انگوٹھوں کے نشانات کی تصدیق کا معاملہ ہے۔نادرا حکام کے مطابق مہندی لگے ہاتھ اور کھیتوں میں کام کرنے والوں کے ہاتھوں کے نشانات پڑھنا مشکل ہے۔

وقت اشاعت : 13/01/2014 - 16:15:09

اپنی رائے کا اظہار کریں