حکومت نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں مالیاتی بے ضابطگیوں کے مبینہ کیسز کی تحقیقات ..
تازہ ترین : 1

حکومت نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں مالیاتی بے ضابطگیوں کے مبینہ کیسز کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ،بڑے پیمانے پر مالیاتی بد انتظامیوں اور بدعنوانیوں نے ہمیں نیب کی مدد حاصل کرنے پر مجبور کر دیا ہے ، عہدیدار بی آئی ایس پی ،نیب کی تکنیکی مہارت کو استعمال کرتے ہوئے ملوث مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے ، عہدیدار کا عزم

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12 جنوری ۔2014ء) حکومت نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام (بی آئی ایس پی) میں مالیاتی بے ضابطگیوں اور بدعنوانیوں کے مبینہ کیسز کی تحقیقات کرنے کا فیصلہ کرلیا نجی ٹی وی کے مطابق بی آئی ایس پی کے سربراہ انور بیگ نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیف چوہدری قمر الزمان سے معاملے پر تفصیل سے مشاورت کی۔معاملات میں پبلک پروکیورمنٹ قوانین کی خلاف ورزی، ذاتی پسند کی بنیاد پر بھرتیاں، ریکارڈ کو درست نہ رکھنا، عوامی پیسے کے استعمال سے متعلق طریقہ کار پر نہ چلنا وغیرہ شامل ہے۔

اتھارٹی کے غلط استعمال نے پروگرام کی موجودہ انتظامیہ کو مجبور کر دیا کہ وہ ان کیسوں کی نیب سے تحقیقات کرائے۔بی آئی ایس پی کے ایک عہدے دارنے نجی ٹی وی کو بتایا کہ بڑے پیمانے پر مالیاتی بد انتظامیوں اور بدعنوانیوں نے ہمیں نیب کی مدد حاصل کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔ہم نیب کی تکنیکی مہارت کو استعمال کرتے ہوئے ان کیسوں کی تحقیقات کریں گے اور مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/01/2014 - 15:46:05

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں