ابتدائی تحقیقات کے مطابق چوہدری اسلم پر ہونے والا حملہ خود کش تھا ، ڈی آئی جی ظفرعباس ..
تازہ ترین : 1

ابتدائی تحقیقات کے مطابق چوہدری اسلم پر ہونے والا حملہ خود کش تھا ، ڈی آئی جی ظفرعباس بخاری

کراچی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 10جنوری 2014ء)لیاری ایکسپریس وے دھماکے کی تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈی آئی جی ظفر عباس بخاری نے کہا ہے کہ ابتدائی تحقیقات کے مطابق چوہدری اسلم پر ہونے والا حملہ خود کش تھا،دھماکے کی جگہ سے ملنے والے اعضا کے ڈی این اے ٹیسٹ کرا رہے ہیں۔ دھماکے کے مقام پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی آئی جی ظفرعباس بخاری بتایا کہ دھماکے کی جگہ سے ملنے والے اعضا ء کے فنگر پرنٹس لیے جائیں گے اور نادرا سے رابطہ کیا جائیگا،حملے میں کونسی گاڑی استعمال ہوئی اس کی بھی تحقیقات کی جارہی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ چودھری اسلم پر5 بار حملہ کیا گیا ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ چودھری اسلم کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے الفاظ کی ضرورت نہیں، چودھری اسلم کا کام بولتا ہے انہوں نے بتایا کہ دھماکے کی جگہ سے جسم کے اعضا ملے ہیں، جن کا ڈی این اے کرایا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پولیس کے حوصلے بلند ہیں ، جرائم پیشہ افراد کے خلاف ہمارا آپریشن جاری ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ڈی آئی جی ظفر عباس بخاری نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف لڑائی میں اگر ہمیں سکورٹی نہ بھی ملی تو پھر بھی ہم اپنا کام جاری رکھیں گے الله تعالیٰ سب سے زیادہ حفاظت کرنے والا ہے ، مشکوک شخص کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ حضرت بلال نامی شخص آغا خان ہسپتال سے گرفتار کیا گیا تاہم وہ ایک پیلی ٹیکسی کا ڈرائیور ہے اس سے تفتیش کی جارہی ہے ابھی حتمی طور پر اس کے بارے میں کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم دہشت گردوں کے خلاف اسی وقت آپریشن کرتے ہیں جب اطلاعات ملتی ہیں اور ہمارے مخبر ہمیں کبھی غلط اطلاع نہیں دیتے حالانکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہمارے متعدد مخبر شہید بھی ہوچکے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 10/01/2014 - 14:52:19

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں