اسلحہ سکینڈل،گرفتار سابق آئی جی نے 8 کروڑ روپے واپس کرنے کی پیشکش کر دی
تازہ ترین : 1
اسلحہ سکینڈل،گرفتار سابق آئی جی نے 8 کروڑ روپے واپس کرنے کی پیشکش کر ..

اسلحہ سکینڈل،گرفتار سابق آئی جی نے 8 کروڑ روپے واپس کرنے کی پیشکش کر دی

پشاور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 10جنوری 2014ء)اسلحہ سکینڈل کیس میں گرفتار سابق آئی جی پولیس ملک نوید کو مزید پانچ روزہ ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا،ملک نوید نے آٹھ کروڑ روپے رضاکارانہ طور پر واپس کرنے کی پیشکش کر دی۔ پشاور میں احتساب عدالت میں ملک نوید کی پیشی کے موقع پر سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے۔سابق آئی جی کے وکیل عبدالطیف ایڈووکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ ان کا موکل شدید ذہنی دباو کا شکار ہے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ذہنی دبائو کے باعث وہ خودکشی بھی کر سکتے ہیں۔نیب نے انہیں پچاس دن اپنی قید میں رکھا لیکن کچھ بھی ثابت نہ کر سکے جس کا مطلب ہے کہ وہ بے گناہ ہیں۔انہوں نے عدالت سے مطالبہ کیا کہ ملک نوید کو ذہنی دبائو سے نکالنے کیلئے جوڈیشل لاک اپ بھیجا جائے۔عدالت نے ملک نوید کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل یا ہسپتال بھیجنے کی درخواست مسترد کر دی تاہم عدالت نے نیب حکام کو سابق آئی جی کو تمام طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔ملک نوید کے وکلاء کی جانب سے پلی بارگیننگ کیلئے درخواست بھی عدالت میں جمع کرا دی گئی۔دوسری جانب نیب ذرائع کے مطابق سابق آئی جی خیبرپختونخوا ملک نوید نے نیب کو آٹھ کروڑ روپے رضاکارانہ طور پر واپس کرنے کی درخواست دی ہے۔

وقت اشاعت : 10/01/2014 - 13:03:53

قارئین کی رائے :

اپنی رائے کا اظہار کریں