برطانیہ میں سائنس دانوں نے لبلبے کے مہلک کینسر کا نیا علکل دریافت کرلیا ، چوہوں ..
تازہ ترین : 1

برطانیہ میں سائنس دانوں نے لبلبے کے مہلک کینسر کا نیا علکل دریافت کرلیا ، چوہوں پر تجربہ شروع

لندن (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 7جنوری 2014ء)برطانیہ میں سائنس دانوں نے لبلبے کے مہلک کینسر کا نیا علکل دریافت کیا ہے جو فی الحال چوہوں پر آزمایا جا رہا ہے۔سائنس دانوں کے مطابق کینسر کی بیماری کو نئی دوا کے ذریعے ایک ہفتے سے بھی کم مدت میں مکمل طور پر ختم کیا جا سکتا ہے، اسی کے ساتھ یہ دوا دوسری اقسام کی رسولیوں کے علکل میں بھی مددگار ثابت ہوتی ہے۔

برطانوی اخبار میٹرو کے مطابق کیمبرج یونیورسٹی کے سائنس دان تیار کی جانے والی نئی دوا کے تجربات رواں برس انسانوں پر بھی کریں گے اور اگر انسانوں پر تجربات کامیاب ہوئے تو یہ دوا دس سال کے اندر انسانی استعمال کیلئے دستیاب ہو سکتی ہے۔ دوا کے چوہوں پر کیے جانے والے تجربات کامیاب ثابت ہوئے ہیں جس میں متاثرہ خلیوں کے گرد حفاظتی حصار کو ختم ہو گئے۔

تجربے میں بظاہر چوہوں میں تمام کینسر چھ دن کے اندر اندر ختم ہو گئے جب کہ لبلبے کے سرطان کو مکمل طور پر ختم کرنے میں ایسا پہلا بار ممکن ہوا ہے۔محققین کی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ڈگلس فیرون کے مطابق دوا جسم کو سرطان کے حملے سے بچانے کے قابل بناتی ہے اور اس طریقے سے ٹھوس رسولیوں کے طریقہ علکل میں بہتری کے بہت زیادہ امکانات پیدا ہو جاتے ہیں۔

یہ علکل صرف لبلبے کے کینسر تک محدود نہیں اور یہ دوسرے اقسام کے سرطانوں میں بھی موثر ثابت ہو سکتا ہے جس میں پھیپھڑوں کا کینسر بھی شامل ہے۔مشہور امریکی کمپنی اپیل کے بانی سٹیو جابز اور اداکار پیٹرک سوازی کی موت بھی لبلبے کے سرطان کی وجہ سے ہوئی تھی۔ برطانیہ میں سالانہ 7900افراد اس سرطان کی وجہ سے مارے جاتے ہیں۔کمیبرج یونیورسٹی کے کینسر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے محققین کے مطابق نئی دواAMD3100 یا Plerixafor کی مدد سے سرطان کی تاخیر سے تشخیص کی صورت میں علکل ممکن ہو سکے گا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 07/01/2014 - 13:46:59

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں