لندن میں پرویز مشرف کا بنک اکاؤنٹ منجمد کردیا گیا، تحقیقات شروع
تازہ ترین : 1

لندن میں پرویز مشرف کا بنک اکاؤنٹ منجمد کردیا گیا، تحقیقات شروع

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔6جنوری۔2014ء) برطانیہ نے حقائق چھپا کر اور غلط بیانی کے ذریعے بینک اکاؤنٹ کھولنے پر سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے خلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔برطانیہ کی فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کے سابق صدر پرویز مشرف کے بینک اکاؤنٹ کے خلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ پرویز مشرف پر الزام ہے کہ انہوں نے حقائق چھپا کر اور غلط بیانی کر کے ایچ ایس بی سی میں ایک بینک اکاؤنٹ کھولا۔

ذرائع نے دنیا نیوز کو بتایا کہ تفتیشی ادارے نے پرویز مشرف کے بینک اکاؤنٹ کو منجمد کر دیا ہے۔ حکام نے اکاؤنٹ کھولنے والے سری لنکن نژاد بینک منیجر کے خلاف بھی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ پرویز مشرف کے لندن میں بینک اکاؤنٹ کا ریکارڈ بھی تحقیقاتی اداروں نے قبضہ میں لے لیا ہے۔ سابق صدر نے اکاؤنٹ کھلواتے ہوئے نہیں بتایا کہ وہ پاکستان کے سابق صدر ہیں۔

برطانیہ میں غیر ملکیوں کو بینک اکاؤنٹ کے لیے بتانا لازمی ہے کہ ان کے ملک میں ان کی اصل شناخت کیا ہے۔ برطانیہ میں بینک اکاؤنٹ کھلوانے کی اسی شق کے تحت لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی اور سابق مصری صدر حسنی مبارک کے بینک اکاؤنٹس کو ضبط کیا گیا تھا۔ اس بینک اکاؤنٹ کے ذریعے پرویز مشرف نے تین سال میں 70 لاکھ پاؤنڈ کی ٹرانزیکشنز کیں جو پاکستانی کرنسی میں مالیت قریباً ایک ارب روپے سے زائد بنتی ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 06/01/2014 - 21:39:20

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں