کراچی اسٹاک مارکیٹ ،گزشتہ ہفتے کے دوران سرمایہ کاری مالیت میں 2 کھرب 4 ارب روپے ..
تازہ ترین : 1

کراچی اسٹاک مارکیٹ ،گزشتہ ہفتے کے دوران سرمایہ کاری مالیت میں 2 کھرب 4 ارب روپے سے زائد کااضافہ،ہفتے کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس 788.66 پوائنٹس اضافے سے 26046.71 کی نئی بلدترین سطح پرپہنچ گیا

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔5 جنوری ۔2014ء)کراچی اسٹاک ایکسچینج میں گزشتہ ہفتے کے دوران زبردست تیزی دیکھی گئی اور کے ایس ای 100 انڈیکس 788.66پوائنٹس اضافے سے26046.71کی نئی ریکارڈ سطح پر بندہوا۔ ہفتے کے دوران سرمایہ کاری مالیت میں 2کھرب 4ارب روپے سے زائد اضافہ ریکارڈ کیاگیا۔تفصیلات کے مطابق یورپی یونین کے پاکستان کو جی ایس پی پلس کی مراعات کے حوصلہ افزا اثرات آئندہ ہفتے بیشتر کمپنیوں کے منافع میں اضافہ متوقع اورکئی مثبت اطلاعات پرسرمایہ کاروں کی بینکنگ ٹیکسٹائل سیمنٹ فرٹیلائزر ٹیلی کام سیکٹرز سمیت بیشتر حصص کی خریداری میں نمایاں دلچسپی اور آئندہ ہفتے کارپوریٹ منافع میں اضافہ متوقع ہونے کے منتظر رہے جس کے نتیجے میں ہفتے کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس 788.66 پوائنٹس اضافے سے 26046.71 کی نئی بلدترین سطح پرپہنچ گیا۔

اس طرح ہفتے کے دوران سرمایہ کاری کی مالیت میں 2 کھرب 4 ارب روپے سے زائد کااضافہ ریکارڈکیا گیاجس سے مجموعی سرمایہ کاری مالیت بڑھ کر62 کھرب 55 ارب 93 کروڑ 70 لاکھ 24 ہزار 565 روپے ہو گئی۔ ہفتے کے دوران مجموعی طور پر ایک ارب 36 کروڑ 14 لاکھ 2 ہزار حصص کا لین دین ریکارڈ کیاگیا۔ ہفتے کے دوران مارکیٹ میں 4 روزہ تیزی اور ایک روز مندی ریکارڈ کی گئی ہفتے کے دوران سرگرم حصص کا دائرہ کار 1984 کمپنیوں تک رہا اس میں 1203 کمپنیوں کی قیمتوں میں اضافہ 689 میں کمی اور 94 کمپنیوں کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

نئے سال کے آتے ہی کاروباری حلقوں میں ملکی معیشت اور حالات کیلئے بہتر اور نئی امیدین وابستہ ہوگئی ہیں۔ اسٹاک ماہرین کے مطابق نئے سال میں مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص کی خریداری کو ترجیح دی جارہی ہے،جس کی وجہ مہنگائی کی شرح میں کمی ہے جو 10 فیصد سے کم ہوکر 9.2 فیصد ہوگئی ہے،سرمایہ کار پر امید ہیں کہ مرکزی بینک کی آئندہ مانیٹر ی پالیسی میں بنیادی شرح سود میں اضافہ نہیں کیا جائے گا۔

ہفتے کا آغازمثبت رجحان ہوا،پہلے دودن مارکیٹ میں ملاجلا رجحان دیکھا گیا ۔سال 2014 کو کاروباری حلقوں میں امیدوں اور ترقی کے سال کے طور پر دیکھا جا رہا ہے، جس کی ایک وجہ اسٹاک ایکس چینج میں زبردست تیزی بھی ہے۔ سینئر ٹریڈرز کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے پرائیویٹائزیشن کے اعلان کے بعد فیصلوں پر عملداری کا شدت سے انتظار ہے، فی الحال کم وقت میں مارکیٹ کی مجموعی صورت حال تسلی و اطمیان بخش ہے۔ حالیہ رپورٹ کے مطابق سال 2013 کراچی اسٹاک ایکس چینج کیلئے بہتر ثابت ہوا، جہاں 49 فیصد تک تیزی دیکھی گئی۔ گزشتہ سال کے آغاز میں انڈیکس 16ہزار 910 پوائنٹس کے اضافے سے شروع ہوئی، جو سال 2013 کے اختتام تک 25ہزار 261 تک پہنچ گئی تھی۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 05/01/2014 - 17:11:14

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں