خیبر پختونخوا میں 11 سال بعد مشرف دور کا بلدیاتی نظام ختم ،کمشنری نظام بحال،صوبے ..
تازہ ترین : 1

خیبر پختونخوا میں 11 سال بعد مشرف دور کا بلدیاتی نظام ختم ،کمشنری نظام بحال،صوبے بھر میں ڈی سی اوز کو ڈپٹی کمشنر بنا دیا گیا ،نئے نظام کے بعد ڈپٹی کمشنرز کے پاس کارپوریشن کے ایڈمنسٹریٹرز کے اختیارات بھی ہوں گے، صوبائی وزارت بلدیات

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ آئی این پی۔ 1جنوری2013ء ) خیبر پختونخوا میں گیارہ سال بعدجنرل مشرف کے بلدیاتی نظام کا خاتمہ کر کے کمشنری نظام دوبارہ بحال کر دیا گیا۔جس کے ساتھ ہی صوبے بھر میں ڈی سی اوز کو ڈپٹی کمشنر بنا دیا گیا ۔ صوبائی وزارت بلدیات کے مطابق نئے نظام کے بعد ڈپٹی کمشنرز کے پاس کارپوریشن کے ایڈمنسٹریٹرز کے اختیارات بھی ہوں گے۔

ڈپٹی کمشنرز کی بحالی کے بعد مجسٹریسی نظام بھی بحال ہو گیا ہے۔بلدیاتی نظام 2001 میں متعارف کرایا گیا تھا۔ خیبر پختونخوا کی حکومت کو اس پر تحفظات تھے۔حال ہی میں صوبائی کابینہ نے یکم جنوری سے پرانا کمشنری نظام دوبارہ نافذ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس نظام کے تحت موجودہ ڈی سی او کا عہدہ ڈپٹی کمشنر کے عہدے میں تبدیل ہوگیا۔ صوبے کے مختلف ڈویژنوں میں کمشنر پہلے ہی کام کر رہے ہیں۔ صوبے میں مجسٹریسی نظام بھی بحال ہو گیا اور گیارہ اسسٹنٹ کمشنر اور مجسٹریٹ بھی تعینات کر دئیے گئے ہیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 01/01/2013 - 13:24:02

اس خبر پر آپ کی رائے‎

متعلقہ عنوان :