پشاور ٗ ضلعی انتظامیہ نے چوہوں کو خاتمے کیلئے ان کے سر کی قیمت مقرر کر دی
تازہ ترین : 1

پشاور ٗ ضلعی انتظامیہ نے چوہوں کو خاتمے کیلئے ان کے سر کی قیمت مقرر کر دی

شہر میں جو کوئی بھی چوہا ماریگا ٗ اسے انعام کے طور پر فی چوہا 25 روپے دیئے جائیں گے ٗاجلاس میں فیصلہ شہر کو چوہوں سے صاف کرنے کے لیے روزانہ کی بنیاد پر آپریشن کیا جائے گا ٗ نصیر احمد

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔30 مارچ۔2016ء)صوبہ خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور کی ضلعی انتظامیہ نے شہر سے چوہوں کے خاتمے کیلئے ان کے سر کی قیمت مقرر کردی۔ناظم شہر محمد عاصم خان کی سربراہی میں اس مسئلے کے حل کیلئے ایک اجلاس منعقد ہوا، جس میں ضلعی ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر جہانگیر خان، پبلک ہیلتھ کوآرڈینیٹر ڈاکٹر محمد عاطف اور واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے افسران نے شرکت کی.یہ مسئلہ اْس وقت اجاگر ہوا جب حال ہی میں پشاور کے مضافاتی علاقے حسن گڑھی میں ایک نومود بچہ چوہے کے کاٹنے کی وجہ سے جاں بحق ہوگیا تھااجلاس کے دوران ضلعی انتظامیہ نے فیصلہ کیا کہ شہر میں جو کوئی بھی چوہا مارے گا، اسے انعام کے طور پر فی چوہا 25 روپے دیئے جائیں گے اس مقصد کیلئے شہر کے چاروں ٹاؤنز میں مخصوص پوائنٹس بنائے گئے ہیں اور شہریوں سے کہا گیا کہ وہ چوہے ان مقامات پر لاکر پھینکیں اور اپنے انعام حاصل کریں۔

اس کے ساتھ ساتھ ایک موبائل سروس کا بھی آغاز کیا گیا ہے جس کے ذریعے شہر کے مضافات میں مارے جانے والے چوہے جمع کیے جاسکیں ضلعی انتظامیہ نے متعلقہ حکام کو شہریوں کو چوہے مار زہر تقسیم کرنے کی بھی ہدایت کی چوہوں کے خلاف آپریشن کے سربراہ نصیر احمد کا کہنا تھاکہ شہر کو چوہوں سے صاف کرنے کے لیے روزانہ کی بنیاد پر آپریشن کیا جائے گا۔واضح رہے کہ یہ معاملہ حال ہی میں خیبر پختونخوا اسمبلی کے اجلاس کے دوران ایک رکن کے 'توجہ دلاؤ نوٹس' کے بعد زیر بحث آیاصوبائی وزیر صحت شہرام خان ترکئی نے سوال اٹھایا تھا،آیا یہ چوہے کسی اور نے صوبے میں بھیجے جس پر اراکین اسمبلی کی جانب سے انتہائی دلچسپ ریمارکس سننے کو ملے تھے۔

وقت اشاعت : 30/03/2016 - 17:38:49

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں