خیبرپختونخوامیں خواتین خصوصا لڑکیوں کے قتل کے واقعات میں اضافہ
تازہ ترین : 1

خیبرپختونخوامیں خواتین خصوصا لڑکیوں کے قتل کے واقعات میں اضافہ

عورتوں کے مرنے کے زیادہ ترکیسز غیرت کے نام پر قتل کے ہوتے ہیں ‘ پولیس

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 فروری۔2016ء)خیبرپختونخوامیں خواتین خصوصا لڑکیوں کے قتل کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ‘رواں سال اب تک 15سے زائد خواتین کو قتل کیاجاچکاہے ۔ پولیس کے مطابق زیادہ تر خواتین کو غیرت کے نام پر قتل کیا گیا ۔پشاورکے تھانہ بھانہ ماڑی کی حدود میں گذشتہ روزکھیتوں سے لاش ملنے کی خبرشہربھرمیں پھیل گئی کہ اسے اغواکے بعد زیادتی اورپھر قتل کیا گیا تاہم بعد میں شاید معاملہ کچھ اورنکلا اوراس شک کو تقویت ورثا کے گھرکوچھوڑکے کہیں اورجانے سے ملی۔

خیبرپختونخوا میں سالانہ اوسطا ًڈھائی سے 3ہزار افراد قتل ہوتے ہیں جن میں ایک ہزار کے قریب خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ پولیس کے مطابق عورتوں کے مرنے کے زیادہ ترکیسز غیرت کے نام پر قتل کے ہوتے ہیں ‘صوبے میں رواں سال 15 سے زیادہ خواتین کو قتل کیاجاچکا ہے۔دوسری جانب سال 2015 ء کے دوران تقریباً ڈیڑھ سو خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات بھی رپورٹ ہوئے ‘ پولیس ذرائع کے مطابق اتنی ہی تعداد کے برابرواقعات بدنامی کے خوف سے تھانوں تک ہی نہیں پہنچے۔

وقت اشاعت : 17/02/2016 - 15:03:05

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں