پشاور، لیڈی ریڈنگ میں زیر علاج مریضوں کے لواحقین نے ڈکٹروں کی ہڑتال کیخلاف احتجاج ..
تازہ ترین : 1

پشاور، لیڈی ریڈنگ میں زیر علاج مریضوں کے لواحقین نے ڈکٹروں کی ہڑتال کیخلاف احتجاج کر کے روڈ بلاک کر دی

ڈاکٹرز نے ایک روز کیلئے او پی ڈی میں فری علاج کی سہولت فراہم کر دی

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 فروری۔2016ء) پشاور کے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کے لواحقین نے ڈکٹروں کی ہڑتال کیخلاف ہسپتال کے سامنے احتجاج کر کے روڈ بلاک کر دی،جس پر ڈاکٹرز نے ایک روز کیلئے او پی ڈی میں فری علاج کی سہولت فراہم کر دی۔تفصیلات کے مطابق بدھ کو خیبرپختونخوا کے سرکاری ہسپتالوں میں حکومت کی جانب سے لازمی سروس ایکٹ کے نفاذ کے بعد ڈاکٹر وں کی دوسرے روز بھی ہڑتال جاری رہی،جس کی وجہ سے ہسپتالوں میں زیر علاج مریضوں کے لواحقین نے سخت پریشانی کے عالم میں ڈاکٹروں کے اس رویے کے خلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے لیڈی ریڈنگ ہسپتال کو ٹریفک کیلئے بلاک کر دیا، جس کی وجہ سے گاڑیاں کی لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں۔

مظاہرین نے نعرے بازی کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ہڑتالی ڈاکٹر ڈیوٹیوں پر واپس آکر اپنی خدمات سر انجام دیں۔ لواحقین نے کہاکہ ان کے مریض انتہائی نازک حالت میں ہیں اور اگر علاج میں مزید تاخیر کی گئی تو انکی زندگیوں کو شدید خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔ لواحقین نے کہا کہ صوبے میں لازمی سروس ایکٹ کا نفاذ حکومت کی جانب سے کیا گیا ہے اور اس میں ہمارے مریضوں کا کیا قصور ہے تاہم انہوں نے صوبائی حکومت سے بھی اپیل کی کہ ہسپتالوں کی موجودہ صورت حال پر غور کرے اوراسپتالوں میں ڈاکٹروں کی حاضری یقینی بنائے یا مریضوں کاسرکاری خرچے پر پرائیویٹ اسپتالوں سے علاج کروایا جائے، تاہم پولیس کے سمجھانے پر مظاہرین نے اپنا احتجاج ختم کر دیا اور بعد ازاں ڈاکٹروں نے بھی ایک روز کیلئے او پی ڈی میں مفت علاج کرنے کا اعلان کردیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 10/02/2016 - 15:08:00

متعلقہ عنوان :

اپنی رائے کا اظہار کریں